.

صنعاء : ایرانی ماہرین کے زیر نگرانی حوثیوں کا سرنگوں کا نیٹ ورک

پہلی اشاعت: آخری اپ ڈیٹ:

یمن میں مقامی اور سکیورٹی ذرائع نے انکشاف کیا ہے کہ حوثی ملیشیا نے اپنے زیر کنٹرول دارالحکومت صںعاء کے مختلف علاقوں میں سرنگوں کا نیٹ ورک تیار کر لیا ہے۔ یہ سرنگیں ایران اور حزب اللہ ملیشیا کے ماہرین کی نگرانی میں کھودی گئیں۔

یمنی خبر رساں ایجنسی "خبر" نے ذرائع کے حوالے سے بتایا ہے کہ حوثیوں کی جانب سے کھودی گئی یہ سرنگیں صنعاء میں ایرانی سفارت خانے سے لے کر دارالحکومت کے جنوب میں الخمسین اور بیت بوس کے علاقوں تک پھیلی ہوئی ہیں۔

صنعاء کے وسط میں ایرانی سفارت خانے سے متصل علاقوں کی مقامی آبادی نے تصدیق کی ہے کہ وہ مستقل صورت میں کھدائی کی آوازیں سنا کرتے تھے۔ ایک رہائشی نے بتایا کہ "جب ہم نے اصل بات جاننے کی کوشش کی تو ہمیں ڈرایا اور دھمکایا گیا اور یہ کہا گیا کہ ہمیں ان آوازوں کا کھوج لگانے یا اس کے بارے میں سوالات کرنے کی کوئی ضرورت نہیں ہے"۔

علاوہ ازیں حوثی ملیشیا نے دارالحکومت کے شمال میں الجراف کے علاقے سے لے کر صنعاء انٹرنیشنل ایئرپورٹ تک سرنگوں کا نیٹ ورک تیار کر لیا ہے۔

ذرائع کے مطابق حوثیوں کی جانب سے کھودی جانے والی سرنگوں کی گہرائی 5 سے 10 میٹر تک ہے۔ ذرائع کا کہنا ہے حوثی ملیشیا ان سرنگوں کو ہتھیاروں کو جمع کرنے اور فضائی حملوں سے چھپنے کے واسطے استعمال کر رہی ہے۔

یاد رہے کہ حوثی ملیشیا نے یمن کے مغربی شہر الحدیدہ میں بھی اس طرح کا سرنگوں کا نیٹ ورک کھودا ہے جو متعدد سرکاری تنصیبات اور رہائشی عمارتوں کو مربوط کرتا ہے۔