.

نیتن یاھو کا دمشق میں ایرانی اسلحہ ڈپو تباہ کرنے کا اعتراف

پہلی اشاعت: آخری اپ ڈیٹ:

اسرائیلی وزیراعظم بنجمن نیتن یاھو نے اعتراف کیا ہے کہ جمعہ کے روز اسرائیل کے جنگی طیاروں نے شام کے دارالحکومت دمشق میں بمباری کرکے ایران کے اسلحہ کے ڈپو کو تباہ کردیا تھا۔ اسرائیلی وزیراعظم کا شام میں کی جانے والی کارروائی کا پہلا باضابطہ اعتراف کیا ہے۔ اس سے قبل اسرائیل کی شام میں فوجی کارروائیوں پرخاموشی کی پالیسی پرعمل پیرا رہا ہے۔

العربیہ ڈاٹ نیٹ کے مطابق کابینہ کے ہفتہ وار اجلاس سے خطاب میں نیتن یاھو نے کہا کہ 36 گھنٹے قبل ہماری فضائیہ نے دمشق کے نین الاقوامی ہوائی اڈے پر ایران کے اسلحہ ذخیرے کو کامیابی کے ساتھ تباہ کیا ہے۔

جمعہ کو شام کی سرکاری خبر رساں ایجنسی "سانا" نے بتایا تھا کہ شامی فضائی دفاع نے دمشق کے قریب دشمن کا ایک فضائی حملہ ناکام بنایا اور متعدد میزائل ہدف سے پہلے ہی تباہ کردیئے گئے۔

ایک عسکری ذریعے کے مطابق مقامی وقت کے مطابق رات 11 بج کر 15 منٹ پر اسرائیلی جنگی طیاروں نے دمشق کے ہوائی اڈے کے قریب ایرانی فوجی اڈے پر میزائل داغے تھے۔

خیال رہے کہ اسرائیل حالیہ ہفتوں کے دوران متعدد بار شام میں اسد رجیم، حزب اللہ اور ایرانی تنصیبات پر حملے کرتا رہا ہے۔