.

سعودی عرب میں عسیر کی پہاڑی چوٹیاں کیسے بادلوں سے گلے ملتی ہیں؟

پہلی اشاعت: آخری اپ ڈیٹ:

سعودی عرب کے سرحدی پہاڑی علاقے عسیر کی السودہ پہاڑی چوٹیوں کی سرسبزی اور شادابی اپنی جگہ کم دلفریب نہیں مگر حال ہی میں پہاڑی چوٹیوں اور بادلوں کے معانقے سے ایسے دل کش مناظر سامنے آئے جس نے ناظرین کے دل موہ لئے۔

العربیہ ڈاٹ نیٹ کے مطابق عسیر کے علاقے میں السودہ پہاڑی چوٹیاں سطح سمندر سے 3015 میٹر بلند ہیں۔ اس پہاڑ کا شمار سعودی عرب کے بلند وبالا پہاڑی علاقوں میں ہوتا ہے۔ بادلوں کے پہاڑی چوٹیوں سے ٹکرانے سے درجہ حراست 13 سے گر کرمنفی سات تک جا پہنچا۔

العربیہ ڈاٹ نیٹ کو طلوع آفتاب کے وقت کے ان مناظر کی دلفریب تصاویر موصول ہوئی ہیں جن میں بادلوں کو زمین پر اترے دیکھات جا سکتا ہے۔

پہاڑی چوٹیوں اور بادلوں کے ٹکرانے جادوئی مناظر قدرتی حسن کے عاشق رشود الحارثی نے اپنے کیمرے میں محفوظ کیے جنہں سوشل میڈیا پر غیر معمولی پزیرائی حاصل ہوئی ہے، ماہرین موسمیات کے مطابق اس طرح کے طلسماتی قدرتی مناظر ہر سال سردیوں کے موسم میں ان پہاڑوں پر دیکھنے کو ملتے ہیں جب بادل پہاڑوں کی چوٹیوں پر اتر آتے ہیں۔