.

لبنان، فلسطین اور سعودی عرب میں’’مہمان ابیض‘‘ کی میزبانی!

پہلی اشاعت: آخری اپ ڈیٹ:

مشرق وسطیٰ کے پانچ ممالک میں شدید برف باری اور تُند وتیز سرد ہواؤں کا سلسلہ جاری ہے۔ اس کے نتیجے میں محکمہ موسمیات کی جانب سے گھروں سے باہر نکلنے سے خبردار کیا گیا ہے اور نقل وحرکت میں مشکلات کے سبب تعلیمی سرگرمیوں کو معطل کر دیا گیا۔

بدھ کی شب لبنان، فلسطین، اردن اور شام میں طوفانی ہواؤں کے ساتھ برف باری ہوئی۔

لبنان میں محکمہ موسمیات نے شدید برفانی ہواؤں کی پیش گوئی کی ہے جس کے دوران سمندر میں پانی کی لہروں کی بلندی سات میٹر تک جا سکتی ہے۔

فلسطین کی بعض گورنریوں میں برف باری دیکھنے میں آئی جب کہ سطح سمندر سے نو سو میٹر سے زیادہ بلند علاقوں میں برفانی ہواؤں کا سلسلہ چلتا رہے گا۔

اردن میں دارالحکومت عمّان کے علاوہ عجلون، جرش اور الکرک کے صوبوں میں پہاڑی علاقوں نے برف کی سفید چادر اوڑھ لی۔

درجہ حرارت میں انتہائی کمی اور سخت ترین سردی کے نتیجے میں لبنان، اردن اور یہاں تک کہ شام میں پناہ گزینوں کے کیمپوں میں موجود شامی پناہ گزینوں کی مشکلات میں اضافے کا قوی اندیشہ ہے۔

دوسری جانب سعودی عرب میں بھی محکمہ موسمیات نے توقع ظاہر کی ہے کہ درجہ حرارت میں نمایاں کمی ،،، مملکت کے شمالی سرحدی علاقے کو اپنی لپیٹ میں لے کر وہاں شدید سردی اور یخ بستہ ہواؤں کا سبب بنے گی۔