عمّان : یمنی حکومت اور حوثیوں کے درمیان قیدیوں کی فہرستوں کا تبادلہ

پہلی اشاعت: آخری اپ ڈیٹ:
مطالعہ موڈ چلائیں
100% Font Size
دو منٹ read

اردن کے دارالحکومت عمّان میں آج جمعے کے روز یمنی قیدیوں اور گرفتار شدگان کے تبادلے کے سمجھوتے پر عمل درامد کی نگراں کمیٹی کا اجلاس منعقد ہوا۔ کمیٹی میں یمنی حکومت اور حوثیوں کے نمائندوں کے علاوہ اقوام متحدہ کے خصوصی ایلچی کے دفتر اور بین الاقوامی تنظیم صلیب احمر کے نمائندے شامل ہیں۔ کمیٹی نے دو روز تک مذکورہ سمجھوتے پر عمل درامد کے لیے اب تک کیے جانے والے اقدامات کا جائزہ لیا اور سمجھوتے کی رُو سے پیش رفت کو یقینی بنانے کے لیے اقدامات کا سلسلہ جاری رکھنے پر موافقت کا اظہار کیا۔

عمّان اجلاس کے اختتام پر اقوام متحدہ کے مشن کی جانب سے جاری بیان میں کہا گیا کہ بات چیت میں ماحول مثبت رہا اور فریقین نے قیدیوں اور گرفتار شدگان افراد کی فہرستوں کا تبادلہ کر کے سمجھوتے کے عملی نفاذ کی جانب پہلا قدم اٹھا لیا ہے۔

یمنی حکومت کے وفد کے سربراہ ہادی ہیج نے "العربیہ" نیوز چینل کو بتایا کہ حوثیوں کے ساتھ خصوصی ملاقات میں ان معاملات پر بات چیت ہوئی جن کے حوالے سے فریقین کے درمیان شکوک پائے جاتے ہیں۔

یاد رہے کہ قیدیوں کے تبادلے کا معاہدہ وہ پہلا سمجھوتا ہے جس پر یمن کی جنگ شروع ہونے کے بعد فریقین نے دستخط کیے۔

یمن کے لیے اقوام متحدہ کے خصوصی ایلچی کے دفتر نے اس امید کا اظہار کیا ہے کہ "فریقین کی جانب سے اس سمجھوتے پر عمل درامد میں تیزی دکھائی جائے گی ،،، یہ امر فریقین کے بیچ دیگر معاملات میں اعتماد سازی میں اہم کردار ادا کرے گا"۔

مقبول خبریں اہم خبریں

مقبول خبریں