.

حماس کا اسرائیل کے توسط سے قطری رقوم وصول کرنے سے انکار

پہلی اشاعت: آخری اپ ڈیٹ:

فلسطین کے علاقے غزہ کی پٹی کی حکمران 'حماس' نے اسرائیل کی نئی شرائط پر قطر سے 15 ملین ڈالر کی امداد کی تیسری قسط لینے سے انکار کردیا ہے۔

'العربیہ' کے ذرائع کے مطابق اسرائیل کی طرف سے غزہ کو قطری امداد اس شرط پر جاری کرنے کی یقین دہانی کرائی گئی تھی کہ غزہ کی سرحد پر کسی قسم کا کوئی پرتشدد احتجاج نہیں ہوگا مگر حماس نے اسرائیل کی یہ شرط مسترد کردی ہے۔ ذرائع کا کہنا ہے کہ حماس نے باور کرایا ہے کہ غزہ کی سرحد پر احتجاج روکنے کی شرط قطر کی ہے اسرائیل کی نہیں۔

خیال رہے کہ قطری امداد لینے سے انکار کی خبر ایک ایسے وقت میں آئی ہے جب فلسطین میں قطری سفیر محمد العمادی اور حماس کی قیادت کے درمیان غزہ میں ملاقات ہوئی ہے۔

غزہ میں حماس تحریک کے نائب صدر خلیل الحیہ نے کہا کہ ہم نے قطری سفیر کو کہہ دیا ہے کہ ہم دوحہ کی امداد کی آڑ میں نئی شرائط قبول نہیں کریں‌گے۔

ان کا کہنا تھا کہ غزہ میں حق واپسی کے لیے جاری احتجاج سلب شدہ حقوق کےحصول تک جاری رہے گا۔

تاہم حماس کے رہ نما باسم نعیم نے العربیہ سےبات کرتے ہوئے کہا امداد کے لیے قطری شرائط کی تردید کی اور کہا کہ شرائط اسرائیل کی طرف سے عاید کی جاتی ہیں۔