عراقی کردستان میں ترک فوجی کیمپ نذرآتش کر ڈالا

پہلی اشاعت: آخری اپ ڈیٹ:
مطالعہ موڈ چلائیں
100% Font Size
1 منٹ read

عراق کے صوبہ کردستان میں بمباری کے نتیجے میں عام شہریوں کی ہلاکتوں کے خلاف شہری ترکی کے خلاف سڑکوں پر نکل آئے اور انہوں نے صوبے کی دھوک گورنری میں موجود ترک فوج کا ایک کیمپ نذرآتش کردیا۔

العربیہ ڈاٹ نیٹ کے مطابق مقامی طبی ذرائع نے بتایا کہ شمالی عراق میں واقع ترک فوجی کیمپ پرحملےکے دوران ایک احتجاجی ہلاک ہوا ہے۔

'العربیہ' چینل کے ذرائع کے مطابق ترک فوج کا ایک کیمپ دھوک میں شیلادزی کے مقام پر قائم ہے۔ یہ علاقہ عراق اور ترکی سرحد پر واقع ہے۔

مظاہرین نے عراقی فوجی کیمپ کو نذرآتش کرنے کے بعد اس پر قبضے کی تصاویر جاری کی ہیں۔ کیمپ پرحملے کے دوران ترک فوج کی جوابی فائرنگ سے متعدد افراد کے زخمی ہونے کی بھی اطلاعات ہیں۔

عراق کے کرد شہریوں کی طرف سے یہ احتجاج ترکی کی علاقے میں کی گئی فضائی کارروائیوں اور ان کے نتیجے میں ہونے والی شہریوں کی ہلاکتوں کے واقعات کے بعد کیا گیا ہے۔

مقبول خبریں اہم خبریں

مقبول خبریں