حوثیوں کی قید سے رہائی کےبعد سعودی شہری کی ریاض آمد

پہلی اشاعت: آخری اپ ڈیٹ:
مطالعہ موڈ چلائیں
100% Font Size
دو منٹ read

یمن میں سرگرم عرب فوجی اتحاد کی مساعی سے حوثی باغیوں کے ہاں پابند سلاسل ایک سعودی شہری بازیابی کے بعد سعودی عرب کے دارالحکومت ریاض پہنچ گیا ہے۔

العربیہ ڈاٹ نیٹ کے مطابق حوثیوں کی قید سے رہائی پانے والے سعودی شہری موسیٰ العواجی کو گذشتہ روز ریڈ کراس کے ایک طیارے کےذریعے صنعاء سے الریاض پہنچایا گیا۔

یمن میں آئینی حکومت کی بحالی کے لیے سرگرم عرب عسکری اتحاد کے ترجمان کرنل پائلٹ ترکی المالکی نے کہا کہ سعودی سپاہی موسیٰ بن شوعی عواجی منگل کی شام ریاض میں شاہ سلمان ہوائی اڈے پر اترا۔

ترجمان نے بتایا کی عوجی کی حوثیوں کی قید سے رہائی کے لیے عرب اتحادی فوج کے ساتھ ساتھ اقوام متحدہ کے یمن کے لیے خصوصی ایلچی مارٹن گریفیتھس نے کردار ادا کیا۔ المالکی نے بتایا کہ حوثی باغیوں کی قید میں رہنے والے سعودی شہری کو غیرانسانی ماحول میں رکھا گیا اور زخمی ہونے کے باوجود اس کی کسی قسم کی طبی مدد نہیں کی گئی۔

ترجمان نے حوثیوں پر جنیوا مذاکرات میں طے پانے والے سمجھوتوں اور دیگر مواقع پر ہونے والے مذاکرات کے فیصلوں کی کھلی خلاف ورزی کا الزام عاید کیا۔ ان کا کہنا تھا کہ حوثی اپنے سیاسی اور عسکری مقاصد کے حصول کے لیے ہٹ دھرمی کا مظاہرہ کررہے ہیں۔ اس وقت بھی ہزاروں یمنی شہری حوثیوں کی قید میں ہیں۔ ان میں سابق وزیر دفاع میجر جنرل محمود الصبیحی بھی شامل ہیں۔ سنہ 2015ء کو سلامتی کونسل کی قرارداد 2216 میں تمام قیدیوں کی غیر مشروط رہائی کا مطالبہ کیا گیا ہے۔

مقبول خبریں اہم خبریں

مقبول خبریں