سوڈان میں احتجاج کے دوران گرفتار تمام افراد رہا کرنے کا حکم

پہلی اشاعت: آخری اپ ڈیٹ:
مطالعہ موڈ چلائیں
100% Font Size
دو منٹ read

سوڈان میں گذشتہ ایک ماہ سے ملک میں جاری پرتشدد مظاہروں کے دوران گرفتار کیے گئے تمام افراد کو رہا کرنے کا فیصلہ کیا گیا ہے۔

العربیہ کے مطابق سوڈان کے انٹیلی جنس ادارے کی طرف سے جاری ایک بیان میں کہا گیا ہے کہ پولیس مراکز میں موجود تمام احتجاجیوں کو چھوڑںے کی ہدایت کردی گئی ہے۔

حال ہی میں پارلیمنٹ کے اجلاس کے دوران سوڈانی وزیر داخلہ نے انکشاف کیا تھا کی احتجاجی مظاہروں کے دوران پولیس نے 816 افراد کو حراست میں لیا ہے۔

گذشتہ بدھ کو امریکا نے سوڈان سے مطالبہ کیا تھا کہ وہ زیرحراست تمام افراد کو فوری طور پر رہا کرے۔ حراست میں لیے گئے شہریوں میں سماجی کارکن، صحافی اور عام شہری شامل تھے۔ انہیں ملک میں مہنگائی کے خلاف جاری مظاہروں کے دوران حراست میں لیا گیا۔

خیال رہے کہ امریکا نے طویل عرصے تک سوڈان پر دہشت گردی کی پشت پناہی کےالزام میں اقتصادی پابندیاں عاید کر رکھی تھیں۔ گذشتہ برس سے امریکا اور سوڈان کے درمیان کشیدگی میں کمی آئی ہے اور سوڈان پر عاید کی گئی اقتصادی پابندیاں بہ تدریج کم کی جا رہی ہیں۔

گذشتہ ایک ماہ سے سوڈان میں جاری احتجاج کے دوران متعدد افراد مارے گئے تھے جس پر امریکا نے سخت تشویش کا اظہار کرتے ہوئے سوڈانی حکومت سے مظاہرین کے خلاف طاقت کا استعمال نہ کرنے، مظاہرین کے قتل کی تحقیقات کرنے اور تمام زیرحراست مظاہرین کو فوری رہا کرنے کا مطالبہ کیا تھا۔

مقبول خبریں اہم خبریں

مقبول خبریں