.

صنعاء کے مشرق میں حوثیوں کے ٹھکانوں پر عرب اتحاد کی کارروائی

پہلی اشاعت: آخری اپ ڈیٹ:

یمن میں آئینی حکومت کو سپورٹ کرنے والے عرب اتحاد نے ایک اعلان میں بتایا کہ جمعرات کے روز صنعاء کے مشرق میں حوثیوں کے اہداف کو نشانہ بنایا گیا۔

عرب اتحاد نے شہریوں سے مطالبہ کیا ہے کہ وہ مذکورہ ٹھکانے سے دور رہیں۔

عرب اتحاد کے مطابق کارروائی میں جاسوس طیارں کی تیاری اور انہیں جمع کرنے کے ٹھکانے کو نشانہ بنایا گیا۔ اتحاد کا کہنا ہے کہ کارروائی کو بین الاقوامی قانون کے مطابق عمل میں لایا گیا اور اس سلسلے میں شہریوں کے تحفظ کے اقدامات کر لیے گئے تھے۔

یمن میں عرب اتحاد یمنی بندرگاہوں کا رخ کرنے والے جہازوں کے لیے 31 پرمٹ جاری کر چکا ہے۔ ان جہازوں پر بنیادی ضروریات کی اشیاء، خوراک اور پٹرولیم مصنوعات شامل ہیں۔

علاوہ ازیں عرب اتحاد نے 4 روز کے دوران مجموعی طور پر 242 پرمٹ جاری کیے۔ ان میں 37 فضائی، 4 زمینی اور قافلوں کی حفاظت کے لیے 170 پرمٹ جاری کیے۔

اتحاد نے بتایا کہ پٹرولیم مصنوعات لے کر آنے والا بحری جہازSINCERO الحدیدہ کی بندرگاہ کے سامنے ڈیڑھ ماہ تک داخلے کا منتظر رہا۔ تاہم حوثیوں نے ایسا کرنے سے انکار کر دیا جس کے بعد جہاز واپس روانہ ہو گیا۔ اس کے علاوہ 3 دیگر جہاز گزشتہ 9 دنوں سے داخلے کے منتظر ہیں۔

عرب اتحاد کے مطابق بندرگاہوں میں بحری جہازوں کے داخلے کے حوالے سے حوثی ملیشیا کی ہٹ دھرمی یمنی عوام کے مفادات اور حالات پر اثر انداز ہوئی ہے۔

اتحاد نے بتایا کہ حوثی ملیشیا نے 3 ہفتوں سے الصلیف کی بندرگاہ پر بھی کوئی جہاز نہیں آنے دیا۔