عراق کے ایوارڈ یافتہ معروف ناول نگار کربلا میں گھر کے نزدیک قتل

پہلی اشاعت: آخری اپ ڈیٹ:
مطالعہ موڈ چلائیں
100% Font Size
3 منٹس read

عراق کے جنوبی شہر کربلا میں ایک معروف لکھاری اور ناول نگار کو ایک نامعلوم مسلح شخص نے فائرنگ کرکے قتل کردیا ہے۔

پولیس اور عینی شاہدین کے مطابق ایک موٹر سائیکل پر سوار حملہ آور نے ہفتے کی شب کربلا شہر میں علاء مشزوب پر ان کے گھر کے نزدیک فائرنگ کی ہے اور ان پر متعدد گولیاں چلائی ہیں۔اس وقت وہ کہیں باہر سے اپنے گھر واپس آرہے تھے۔

فوری طور پر یہ معلوم نہیں ہوسکا کہ حملہ آور نے انھیں گولیوں کا کیوں نشانہ بنایا ہے ۔کسی گروپ نے بھی ان کے قتل کی ذمے داری قبول نہیں کی ہے۔

علاء مشزوب کی عمر پچاس سال تھی ۔انھوں نے متعدد ناول لکھے تھے اور ان کے افسانوں کے مجموعے بھی شائع ہوچکے ہیں۔وہ کربلا کی مقامی سول سوسائٹی میں بھی بہت فعال تھے۔ مقتول کو ان کی ادبی خدمات کے اعتراف میں متعدد مقامی اور علاقائی ایوارڈز سے نواز اگیا تھا۔

عراق کے وزیر ثقافت وسیاحت عبدالعامر الہمدانی نے ایک بیان میں ان کے قتل پر دکھ اور افسوس کا اظہار کرتے ہوئے کہا ہے کہ ’’ ثقافتی منظر نامہ اپنے ایک خصوصی لکھاری اور تخلیق کار سے محروم ہوگیا ہے‘‘۔

عراق کے لکھاریوں کی یونین نے ان کے قتل کی مذمت کی ہے اور سکیورٹی فورسز پر دانشوروں کے تحفظ کے لیے خاطر خواہ انتظامات نہ کرنے کا الزام عاید کیا ہے۔اس نے ایک بیان میں کہا ہے کہ ’’ یونین مرکزی اور وفاقی حکومت کو اس واقعے کی مکمل ذمے دار سمجھتی ہے ۔وہ دونوں عوام کو تحفظ مہیا کرنے میں ناکام رہی ہیں‘‘۔

مقبول خبریں اہم خبریں

مقبول خبریں