.

شام سے انخلاء سے قبل داعش اپنے تمام ٹھکانوں سے محروم ہوجائے گی: امریکی جنرل

پہلی اشاعت: آخری اپ ڈیٹ:

امریکی سینٹرل کمانڈ کے سربراہ جنرل جوزف فوٹیل جو مشرق وسطیٰ میں امریکی فوج کے انچارج بھی ہیں کا کہنا ہے کہ شام سے امریکی فوج کے انخلاء سے قبل'داعش' اپنے تمام ٹھکانوں سے محروم ہوجائے گی۔

تاہم امریکی جنرل نے خبردار کیا کہ 'داعش' اس وقت شام کی سلامتی کے لیے خطرہ ہے اور امریکی انخلاء کے بعد بھی وہ خطرہ برقرار رہے گا۔ ان کا کہنا تھا کہ داعش کی قیادت، جگجو، معاونت کار، سہولت کار اور وسائل رکھتی ہے اور وہ لڑائی جاری رکھ سکتی ہے۔

ایک سوال کے جواب میں جنرل فوٹیل نے کہا کہ صدر ڈونلڈ ٹرمپ نے شام سے فوج نکالنے کے اعلان سے قبل کوئی مشورہ نہیں کیا۔

جنرل جوزف فوٹیل امریکا کے ان عسکری رہ نمائوں میں‌سے ایک ہیں جو شام سے امریکی فوج کے انخلاء کے خطرناک نتائج اور داعش کے دوبارہ منظم ہونے کی وارننگ دے چکے ہیں۔

امریکی سینیٹ کے اجلاس میں بات کرتے ہوئے جنرل فوٹیل نے کہا کہ ہمیں 'داعش' کے نیٹ ورک کو ختم کرنے کے لیے دبائو برقرار رکھنا چاہیے۔ اگر یہ گروپ دوبارہ شام میں فعال ہو گیا تو ہم کچھ نہیں کر سکیں گے۔

انہوں نے مزید کہا کہ داعش کے زیر تسلط علاقے کم ہو کر 20 مربع میل تک آ گئے ہیں۔ شام میں امریکا کی معاون فورسز امریکی فوج کے انخلاء سے قبل ان علاقوں پر اپنا کنٹرول قائم کرلیں گی۔