.

سعودی عرب: بیطاری نظام کی خلاف ورزیوں پر 5 لاکھ ریال کے جرمانے

پہلی اشاعت: آخری اپ ڈیٹ:

سعودی عرب میں ماحولیات، پانی اور زراعت کی وزارت نے پانچ صوبوں میں حیوانات کی ثروت اور ان سے نرمی سے متعلق نظام کی خلاف ورزی کرنے والوں پر متعدد سزائیں لاگو کیں، جن کے جرمانوں کی مجموعی مالیت 5 لاکھ ریال سے زیادہ ہے۔

بیطاری صحت اور نگرانی کے شعبے کے ڈائریکٹر جنرل ڈاکٹر علی الدویرج نے واضح کیا کہ مذکورہ خلاف ورزیوں میں بیطاری تنصیبات کے اجازت ناموں کی عدم موجودگی، بغیر لائسنس بیطاری طب کی انجام دہی، مریض جانوروں کی تجارت، جانوروں پر تشدد اور ان کو اذیت رسانی، جانوروں کے میلوں میں چلانے کے لیے اونٹ کے منہ کو برے طریقے سے باندھنا اور راستے کے اطراف میں دودھ کی فروخت جس سے صارفین کو نقصان کا اندیشہ ہو، اہم ترین ہیں۔ یہ خلاف ورزیاں مکہ مکرمہ، مدینہ منورہ، ریاض، حائل اور الشرقیہ صوبے میں سامنے آئیں۔

علی الدویرج نے اس سلسلے میں عوام سے تعاون کا مطالبہ کرتے ہوئے کہا کہ اس طرح کی خلاف ورزیوں کی فوری اطلاع دی جائے۔ انہوں نے جانوروں اور بیطاری تنصیبات کے مالکان پر زور دیا کہ وہ متعلقہ نظام اور ہدایات کا پاسداری کریں اور جانوروں کے حوالے سے ضرر رساں افعال سے دور رہیں۔