'زینبیات' ملیشیا حوثیوں کے لیے خواتین کے اغواء کا نیا آلہ کار

پہلی اشاعت: آخری اپ ڈیٹ:
مطالعہ موڈ چلائیں
100% Font Size
1 منٹ read

یمن کے مقامی ذرائع نے خبر دی ہے کہ حوثی باغیوں کی جانب سے صنعاء میں نوجوان لڑکیوں کے اغواء‌ کا سلسلہ جاری ہے۔

العربیہ ڈاٹ نیٹ کے ذرائع کے مطابق حوثیوں نے حالیہ چند ایام کے دوران کئی نوجوان لڑکیوں کو اغواء‌ کرنے کے بعد اُنہیں خفیہ حراستی مراکز میں ڈال دیا ہے۔ خواتین کے اغواء کے جُرم میں حوثی ملیشیا کی وفادار 'زینبیات' نامی ایک ملیشیا کا ہاتھ ہے، جو حوثیوں‌ کے لیے خواتین کے اغواء کی آیک آلہ کار کے طور پر سرگرم ہے۔

یمن میں اغواء کی گئی ایک لڑکی کے بھائی نے بتایا کہ اس کی ہمشیرہ کو دیگر خواتین کے ساتھ بیٹھنے کے الزام میں اغواء کیا گیا۔ اس کے اغواء میں 'الزینبیات' ملیشیا ملوث ہے۔ ایک دوسری خاتون کو گھر کے قریب دکان سے خریداری کرتے ہوئے اغواء کر لیا گیا۔

ذرائع کا کہنا ہے کہ ایک خاتون کے اغواء کے بعد چار دن تک اس کا کوئی پتا نہ چلا۔ کافی کوشش کے بعد معلوم ہوا کہ وہ حوثیوں کے ایک خفیہ حراستی مرکز میں پابند سلاسل ہے۔

ذرائع کا کہنا ہے کہ ایک لڑکی کے اغواء‌ کے بعد حوثی باغیوں کی طرف سے ان کے ہاشمی خاندان کو سنگین نتائج کی دھمکیاں دی گئیں اور کہا گیا ان کے خاندان کی دیگر خواتین کو بھی گرفتار کیا جاسکتا ہے۔

مقبول خبریں اہم خبریں

مقبول خبریں