.

عراق کی پانچ گورنریوں میں 'داعش'کی باقیات کے خلاف آپریشن کی تیاری

پہلی اشاعت: آخری اپ ڈیٹ:

عراق کی مسلح افواج اور قانون نافذ کرنے والے دیگر اداروں نے ملک کی پانچ بڑی گورنریوں میں شدت پسند تنظیم'داعش' کی باقیات کے خلاف ایک نئے آپریشن کی تیاری مکمل کرلی ہے۔ یہ آپریشن کسی بھی وقت شروع کیا جا سکتا ہے۔

العربیہ ڈاٹ نیٹ کے مطابق صلاح الدین صوبے کے سابق گورنر اورقومی محور اتحاد کے چیئرمین احمد الجبوری نے کہا کہ فضائیہ سمیت فوج کی دیگر یونٹوں کے اہلکاروں پر مشتمل فورس جلد ہی صلاح الدین، نینویٰ، کرکوک، دیالی اور الانبار میں 'داعش' کی باقیات کے خلاف فوجی کارروائی شروع کرے گی۔

عراق میں داعش کے خلاف یہ فوجی آپریشن ایک ایسے وقت میں شروع کیا جا رہا ہے جب حال ہی میں داعشی جنگجووں نے تین سگے بھائیوں کو موت کےگھاٹ اتار دیاتھا۔ اس کے علاوہ دوسرے شہروں میں‌بھی داعش کی جانب سے خواتین اور بچوں کے حقوق کی پامالیاں جاری ہیں۔

عراقی پارلیمنٹ میں دفاعی کمیٹی کے رکن جاسم جبارہ کا کہنا ہے کہ داعش کی باقیات عراق میں پھیل رہی ہیں۔ ان کے خلاف بروقت فوجی کارروائی کرنا ہوگی۔ داعش کےخلاف متوقع آپریشن میں صلاح الدین گونری کے شمالی پہاڑی علاقے مکحول، کرکوک کے جنوب مغربی علاقے جبال حمرین، نینویٰ اور صلاحدین کے درمیان حویجہ کنعوص اور دیگر علاقوں میں بھی داعش کےخلاف آپریشن کا امکان ہے۔