سعودی عرب قضیہ فلسطین کے حوالے سے کسی خفیہ ایجنڈے پرعمل پیرا نہیں: فتح

فلسطین کےحوالے سے سعودی موقف پر مکمل اعتماد ہے

پہلی اشاعت: آخری اپ ڈیٹ:
مطالعہ موڈ چلائیں
100% Font Size
دو منٹ read

فلسطینی تحریک فتح کے سیکرٹری جنرل جبریل الرجوب نے قضیہ فلسطین کے حوالے سے سعودی عرب کے موقف پر مکمل اعتماد کا اظہار کیا ہے۔ان کا کہنا ہے کہ سعودی عرب مسئلہ فلسطین کے حوالے سے کسی خفیہ ایجنڈے پر عمل پیرا نہیں۔ ریاض خفیہ اور اعلانیہ ہر اعتبار سے فلسطینیوں کے دیرینہ حقوق کی حمایت کرتا ہے۔

'صوت فلسطین' ریڈیو سے بات کرتے ہوئے فتحاوی لیڈر کا کہنا تھا کہ اُنہیں توقع ہے کہ سعودی ولی عہد اسرائیل کے ساتھ تعلقات قائم نہ کرنے کی پالیسی کو پوری عرب دنیا کی تزویراتی حکمت عملی میں تبدیل کرنے کی کوشش کریں گے۔

ایک سوال کے جواب میں انہوں نے کہا کہ فلسطینی قیادت کے پاس اس بات کی معلومات ہیں کہ سعودی ولی عہد شہزادہ محمد بن سلمان نے ریاض میں امریکی حکام پر واضح‌ کیا تھا کہ ان کا مُلک ایسا کوئی امن معاہدہ قبول نہیں کرے گا جس میں فلسطینیوں کے دیرینہ اور اصولی مطالبات تسلیم نہیں کیے جائیں گے۔

ادھراسرائیل کے عبرانی ٹی وی چینل 10 نے ایک خفیہ دستاویز نشر کی ہے جس میں کہا گیا ہے کہ سعودی ولی عہد نے اس وقت تک اسرائیل کےساتھ تعلقات کےقیام کو مسترد کردیا ہے جب تک فلسطینیوں کو ان کا حق خود ارادیت فراہم کرنے کے ساتھ مشرقی بیت المقدس کو آزاد اورخود مختار فلسطینی ریاست کا دارالحکومت نہیں بنایاجاتا۔

دستاویزمیں سینیر سفارتی ذرائع کے حوالے سے کہا گیا ہے کہ قضیہ فلسطین کا منصفانہ حل سعودی ولی عہد کی پہلی ترجیح ہے اور وہ اس کا اظہار الظہران عرب سربراہ کانفرنس سمیت کئی دوسرے مواقع پر کرچکے ہیں۔

مقبول خبریں اہم خبریں

مقبول خبریں