.

امریکی اڈے ہمارے میزائلوں کی زد میں ہیں: ایرانی نائب وزیر دفاع

پہلی اشاعت: آخری اپ ڈیٹ:

ایران نے نائب وزیر دفاع رضا طلائنک نے دعویٰ کیا کہ شام میں امریکا کے تمام فوجی اڈے ایران کے میزائلوں کی زد میں‌ ہیں۔

'العربیہ ڈاٹ نیٹ' کے مطابق طلائنک نے امریکیوں کو سنگین نتائج کی دھمکی دیتے ہوئے کہا کہ امریکی اڈوں کو ایران کے اندر سے نشانہ بنایا جا سکتا ہے۔

جرمن ٹی وی چینل 'ڈوئچے فیلے'کے مطابق ایرانی نائب وزیر دفاع نے کہا کہ پابندیوں کے 40 سال کے باوجود اسلامی جمہوریہ ایران خطے کا 'پہلا مُحرک' بن چکا ہے۔

ایرانی عہدیدار کا کہنا تھا کہ امریکیوں اورصہیونیوں کو ایران کی طاقت کا اندازہ ہے، یہی وجہ ہے کہ وہ شام سے بھاگ رہے ہیں مگر قاسم سلیمانی اور مدافعین حرم اہل بیت نے امریکیوں اور صہیونیوں کو سبق سکھا دیا ہے۔

اُنہوں نے مزید کہا کہ اسلامی جمہوریہ ایران دینی، سائنسی اور ثقافتی اعتبار سے مشرق وسطیٰ کی سُپر پاور بن چکا ہے۔

ادھرایرانی خبر گان کونسل اور تہران کےقائم مقام امام احمد خاتمی نے گذشتہ روز ایک بیان میں کہا کہ ایران جوہری بم تیار کرنے کی پوری صلاحیت رکھتا ہے۔ ان کا کہنا تھا کہ ایران کو امریکا اور اس کے اتحادیوں سے نمٹنے کے لیے اپنے میزائل پروگرام پر کام جاری رکھنا چاہیے۔

اس سے قبل ایرنی پاسداران انقلاب کی فضائیہ کے سربراہ امیرعلی حاجی زادہ نے کہا تھا کہ افغانستان، متحدہ عرب امارات، قطرمیں قائم امریکی فوجی اڈے، بحر اومان اور خلیج میں موجود امریکی بحری بیڑے ہمارے میزائلوں کی زد میں ہیں۔ ایران کو کسی بھی قسم کا خطرہ ہوا تو انہیں نشانہ بنایا جائے گا.