.

داعش کی پروپیگنڈا مہم کا سرگرم رکن ابو صہیب فرانسیسیSDF کے قبضے میں

پہلی اشاعت: آخری اپ ڈیٹ:

شام میں مقامی ذرائع نے پیر کی شام العربیہ نیوز چینل کو بتایا کہ سیرین ڈیموکریٹک فورسز ایس ڈی ایف نے داعش تنظیم کے فرانسیسی رکن "ابو صہيب الفرنسی" کو گرفتار کر لیا ہے۔ وہ تنظیم کے لیے پروپیگنڈا مہم کا حصّہ رہا ہے۔

تاہم شامی کارکنان کا دعوی ہے کہ گرفتار ہونے والا شخص فرانسیسی داعشی نہیں بلکہ ایک شامی ہے جو داعش تنظیم کی جانب سے "باندی بنائی گئی لڑکیوں" کی فروخت کا کام کرتا تھا۔

مذکورہ فرانسیسی داعشی مارچ 2015 میں ایک مختصر وڈیو میں نمودار ہوا تھا جس میں اس نے اسلام قبول کرنے اور داعش تنظیم میں شامل ہونے کے بارے میں بتایا۔

وڈیو میں سرخ داڑھی والے شخص نے جو ایک فرانسیسی کمپنی میں عہدے دار تھا یہ بتایا کہ وہ پہلے Catechetical School of Alexandria سے وابستہ ہوا تھا تاہم وہاں اسے اپنے سوالات کے واضح جوابات نہیں مل سکے۔

فرانسیسی داعشی نے بتایا کہ اس نے اپنی ملازمت کے سلسلے میں 38 ملکوں کا دورہ کیا۔ تاہم ایک روز ایک شخص اسے ایسے "حقیقی مسلمانوں سے ملوانے کے لیے لے گیا جنہوں نے جہاد انجام دیا"۔

اس فرانسیسی کا کہنا تھا کہ "جون 2014 میں داعش تنظیم کے سربراہ ابو بکر البغدادی کی جانب سے شام اور عراق میں اپنے زیر کنٹرول علاقوں پر "خلافت" کے اعلان کے وقت سے ہی میں نے اپنے آپ سے کہہ رکھا تھا کہ مجھے اس کی پیروی کرنی چاہیے"۔