.

سعودی عرب کا تیل کی برآمدات میں یومیہ 69 لاکھ بیرل کی کمی کا ارادہ

پہلی اشاعت: آخری اپ ڈیٹ:

سعودی عرب کے وزیر توانائی خالد الفالح کا کہنا ہے کہ مملکت مارچ میں یومیہ 98 لاکھ بیرل خام تیل پیدا کرنے کی منصوبہ بندی کر رہی ہے۔ انہوں نے یہ بات برطانوی اخبار "فنائنشل ٹائمز" کو دیے گئے ایک بیان میں کہی۔

اخبار نے منگل کے روز بتایا ہے کہ مارچ میں سعودی عرب کی تیل کی برآمدات کم ہو کر یومیہ 69 لاکھ بیرل ہو جائے گی۔

اس سے قبل خالد الفالح نے اپنے ایک سابقہ بیان میں کہا تھا کہ تیل کی عالمی منڈی قلابازیاں کھا رہی ہے تاہم اس وقت منڈی کی سمت درست جانب ہے۔

الفالح کے مطابق 2019 کے ابتدائی دو ہفتوں کے دوران تیل کی عالمی منڈی میں اُن فیصلوں کے اثرات نظر آنا شروع ہو گئے جو 2018 کی آخری سہ ماہی میں لیے گئے تھے۔ اگرچہ منڈی میں پیش کیے جانے والے تیل کی یومیہ مقدار میں تقریبا 12 لاکھ بیرل کی کمی کا آغاز دو نومبر سے ہوا تھا تاہم ذرائع کا کہنا ہے کہ دسمبر میں اوپیک ممالک کی تیل کی پیداوار میں نومبر کے مقابلے میں 6 لاکھ بیرل سے زیادہ کی کمی آئی۔