سعودی عرب: کُتے سے وحشیانہ سلوک کا مرتکب گرفتار

پہلی اشاعت: آخری اپ ڈیٹ:
مطالعہ موڈ چلائیں
100% Font Size
1 منٹ read

سعودی عرب کے شہر جازان میں ایک شخص نے وحشیانہ پن اور غیرانسانی طرز عمل کا مظاہرہ کرتے ہوئے اپنی کار کے پیچھے کتے کو باندھ کر گھیسٹا جس پر عوامی حلقوں میں شدید رد عمل سامنے آیا ہے۔ پولیس نے ملزم کی تلاش کے بعد اسے حراست میں لے کر اس کے خلاف قانونی کارروائی شروع کر دی ہے۔

العربیہ ڈاٹ نیٹ کے مطابق گذشتہ روز سوشل میڈیا پر ایک فوٹیج وائرل ہوئی جس میں ایک کتے کو کار کے پیچھے باندھا دیکھا جاسکتا ہے۔ کتا کار کے پیچھے دوڑنے کی کوشش کررہا ہے مگر وہ گھیسٹا جا رہا ہے۔ بے زبان حیوان کے ساتھ غیرانسانی سلوک کے مرتکب شخص کو عوامی حلقوں کی طرف سے سخت سزا دینے کا مطالبہ کیا گیا ہے۔

جازان میں زراعت اور ماحولیات کے مشیر احمد البوق نے اس واقعے کو وحشیانہ اور غیرانسانی قراردیتے ہوتے ہوئے اس کے مرتکب کو سخت سزا دینے کا مطالبہ کیا ہے۔ ان کا کہنا ہے کہ حیوانوں کو اذیت دینے کے مرتکب شخص کے لیے 50 ہزار ریال سے چار لاکھ ریال تک جرمانہ کی سزا مقرر ہے۔

ادھر جازان کی پولیس نے 'ٹویٹر' پر پوسٹ ایک بیان میں کہا ہے کہ حکام نے کتے کو اذیت پہنچانے کے مرتکب شخص کو گرفتار کرلیا ہے اور اس کے خلاف قانونی کارروائی شروع کردی گئی ہے۔

مقبول خبریں اہم خبریں

مقبول خبریں