لبنان: بدترین دشمن بھی پارلیمنٹ کی چھت تلے ایک ساتھ بیٹھنے پرمجبور

پہلی اشاعت: آخری اپ ڈیٹ:
مطالعہ موڈ چلائیں
100% Font Size
1 منٹ read

لبنان میں گذشتہ برس ہونے والے پارلیمانی انتخابات میں ایک دوسرے کی سخت مخالف قوتیں بھی ایوان میں ایک جگہ دیکھی جا رہی ہیں۔ ان میں بعض ایک دوسرے کے لیے بالکل ہی ناقابل قبول ہیں مگر'حالات کی ستم ظریفی' نے انہیں بھی ایک ساتھ بیٹھنے پرمجبورکردیا۔

العربیہ ڈاٹ نیٹ کے مطابق لبنان کے ذرائع ابلاغ میں ایک تصویر کو کافی پذیرائی ملی ہے جس میں لبنانی فورسزپارٹی اورحزب اللہ کے وزیروں کو ایک ساتھ بیٹھے دیکھا جاسکتا ہے۔ فورسز پارٹی کی وزیر مملکت برائے انتظامی ترقی می شدیاق حزب اللہ کے وزیر محمد فینش کے قریب بیٹھی دیکھی جاسکتی ہیں۔

خیال ہے کہ لبنانی رکن پارلیمنٹ اور خاتون وزیر می شدیاق پرناکام قاتلانہ حملہ بھی کیا جا چکا ہے۔ اس نے اس حملے کی ذمہ داری شامی رجیم اور لبنان میں اس کے اتحادیوں پرعاید کی ہے۔

مقبول خبریں اہم خبریں

مقبول خبریں