.

یمن : حوثیوں کے مقرر کردہ عمران صوبے کے گورنر کی ہلاکت کی خبریں

پہلی اشاعت: آخری اپ ڈیٹ:

یمن میں حجہ صوبے میں حجور کے علاقے کے اطراف قبائلیوں اور حوثی ملیشیا کے درمیان جھڑپوں کے دوران عمران صوبے کے گورنر فیصل جمعان کے مارے جانے کی خبریں آ رہی ہیں۔ جمعان کو حوثی ملیشیا کی جانب سے گورنر مقرر کیا گیا تھا۔

العربیہ کے ذرائع کے مطابق ان جھڑپوں کے دوران عمران صوبے کا سکیورٹی ڈائریکٹر بھی شدید زخمی ہو گیا جب کہ متعدد حوثی جنگجو ہلاک ہو گئے۔

دوسری جانب حجور کے محاذ کے نگراں نے بتایا ہے کہ علاقہ محصور ہو چکا ہے۔ قبائلی جنگجوؤں اور حوثیوں کے درمیان گھمسان کی لڑائی ہو رہی ہے اور یمنی فوج کی کارروائی ابھی تک شروع نہیں ہوئی۔

اس سے قبل ذرائع نے باور کرایا تھا کہ یمنی فوج حجہ صوبے کے بقیہ ضلعوں کو حوثیوں سے واپس لینے کے لیے کئی محاذوں پر وسیع عسکری کارروائی کرے گی۔

واضح رہے کہ حوثی ملیشیا نے حجہ صوبے میں تقریبا دو سال سے حجور کے قبائل کا محاصرہ کر رکھا ہے۔

یمنی فوج کے ایک کمانڈر کے مطابق حجہ کی کارروائی کو پھیلا کر الحدیدہ صوبے تک پہنچا دیا جائے گا۔

یمنی فوج اور عرب اتحاد نے حجور کے علاقے کا محاصرہ ختم کرنے اور حجہ ضلع کو محفوظ بنانے کے لیے جمعے کے روز کارروائی کا آغاز کیا تھا۔

حجور کے علاقے پر ناکام حملے میں حوثی ملیشیا کے 25 ارکان مارے گئے۔

ادھر حجہ صوبے کے محصور ضلعے کشر میں حجور قبیلے کے افراد نے اپنے بچاؤ کے لیے عالمی برادری اور انسانی حقوق کی تنظیموں سے جلد مداخلت کی اپیل کی ہے۔ علاوہ ازیں حجور کے علاقے میں زخمی شہریوں کے علاج کے واسطے زمینی ہسپتال فراہم کرنے کا بھی مطالبہ کیا گیا ہے۔