بشار الاسد سے اتحاد کیا تو ایس ڈی ایف کی امداد روک دیں گے : امریکا کی دھمکی

پہلی اشاعت: آخری اپ ڈیٹ:
مطالعہ موڈ چلائیں
100% Font Size
دو منٹ read

شام میں داعش کے خلاف سرگرام بین الاقوامی اتحاد کی فورسز کے امریکی کمانڈر جنرل پول لیکامیرا نے عندیہ دیا ہے کہ اگر سیرین ڈیموکریٹک فورسز کے جنگجوؤں نے بشار حکومت یا روس کے ساتھ اتحاد قائم کیا تو امریکا ایس ڈی ایف کے لیے اپنی عسکری امداد روک دینے پر مجبور ہو گا۔

اتوار کی شب جاری بیان میں جنرل لیکامیرا نے مزید کہا کہ اگر کُرد جنگجو امریکا کے شراکت دار رہے تو واشنگٹن ان کو تربیت دینے اور مسلح کرنے کا سلسلہ جاری رکھے گا۔ امریکی جنرل نے داعش کے خلاف کردوں کی مشکل کامیابی کو بھی سراہا۔

شام کے حوالے سے گزشتہ چند گھنٹوں کے دوران بالخصوص میونخ سکیورٹی کانفرنس میں مختلف بین الاقوامی مواقف سامنے آئے ہیں۔ ترکی نے کرد فورسز کے حوالے سے اپنے سابق موقف کو دہراتے ہوئے باور کرایا ہے کہ ترکی اور شام کی سرحد کی سکیورٹی کو یقینی بنانا اور دہشت گرد جماعتوں سے چھٹکارہ پانا اولین ترجیحات ہیں۔ ادھر امریکا کا کہنا ہے کہ شام سے اس کا انخلا حلیفوں کے ساتھ مشاورت سے تدریجی صورت میں ہو گا۔ البتہ فرانس نے مطالبہ کیا ہے کہ شام میں داعش کے خلاف بڑی کامیابیاں حاصل کرنے والے کردوں کو تنہا نہ چھوڑا جائے۔

یاد رہے کہ سیرین ڈیموکریٹک فورسز کے کمانڈر نے ہفتے کے روز ایک پریس کانفرنس میں اعلان کیا تھا کہ داعش تنظیم کے بچے کھچے عناصر الباغوز میں محض 600 مربع میٹر کے رقبے میں محصور ہو چکے ہیں اور ان کا اختتام قریب ہے۔ انہوں نے واضح کیا کہ داعش کے خلاف مہم جوئی میں سست روی کی وجہ یہ ہے کہ دہشت گرد تنظیم اپنی حراست میں موجود شہریوں کو انسانی ڈھال کے طور پر استعمال کر رہی ہے۔

مقبول خبریں اہم خبریں

مقبول خبریں