.

یمن : حجہ صوبے میں حملہ پسپا ، 14 حوثی باغی ہلاک

پہلی اشاعت: آخری اپ ڈیٹ:

یمن کے شمال مغربی صوبے حجہ میں پیر کے روز ایک ناکام حملے کی کوشش میں حوثی ملیشیا کے 14 ارکان مارے گئے اور متعدد زخمی ہو گئے۔

زمینی ذرائع کے مطابق ضلع کشر میں حجور کے محاذ پر عوامی مزاحمت کاروں نے حوثی ملیشیا کے حملے کو پسپا کر دیا۔ اس دوران باغیوں کو جانی نقصان پہنچنے کے علاوہ ان کی عسکری گاڑیاں تباہ کر دی گئیں اور ہتھیاروں اور گولہ بارود کو قبضے میں لے لیا گیا۔

حوثی ملیشیا نے گزشتہ چند روز کے دوران حجہ صوبے کے ضلعوں کشر، افلح الشام، کحلان، الشرف، قارہ اور وشحہ میں رابطوں اور انٹرنیٹ کے تمام نیٹ ورک منقطع کر دیے تھے۔ باغیوں کے اس اقدام کا مقصد یمنی شہریوں کے خلاف اپنے جرائم پر پردہ ڈالنا ہے۔ ان کارستانیوں میں شہریوں کے گھروں پر گولہ باری اور امدادی غذائی اور طبی مواد کو پہنچنے سے روکنا شامل ہے۔

مقامی آبادی کے مطابق حوثیوں کی اندھا دھند گولہ باری کے نتیجے میں درجنوں یمنی خاندان خواتین اور بچوں سمیت پہاڑوں اور غاروں کی جانب نقل مکانی کر گئے۔

یاد رہے کہ حوثی ملیشیا کئی ہفتوں سے حجہ صوبے میں حجور کے قبائل پر عسکری حملے کر رہی ہے۔ کارروائی کا مقصد اس علاقے پر قبضہ کرنے کی کوشش ہے جس پر وہ ستمبر 2014 میں آئینی حکومت کا تختہ الٹنے کے بعد سے کنٹرول حاصل نہیں کر سکی۔