.

خام تیل کی ذخیرہ اندوزی کے لیے دنیا کی سب سے بڑی تنصیب امارات میں ہو گی

پہلی اشاعت: آخری اپ ڈیٹ:

ابوظبی کے ولی عہد شیخ محمد بن زاید نے بتایا ہے کہ ابوظبی نیشنل آئل کمپنی (ایڈنوک) نے جنوبی کوریا کی کارپوریشن نے جنوبی کوریا کی کمپنی ایس کے انجینئرنگ کے ساتھ ایک معاہدے پر دستخط کیے ہیں۔ اس سمجھوتے کے تحت متحدہ عرب امارات میں الفجیرہ میں خام تیل کی ذخیرہ اندوزی کی دنیا کی سب سے بڑی تنصیب تعمیر کی جائے گی۔

بدھ کے روز اپنی ٹویٹ میں انہوں نے بتایا کہ زیر زمین تنصیب میں 4.2 کروڑ بیرل کی گنجائش ہو گی اور اس منصوبے پر 4.4 ارب اماراتی درہم لاگت آئے گی۔

اس سے قبل ایڈنوک کمپنی نے منگل کے روز اعلان کیا تھا کہ اس نے جنوبی کوریا میں توانائی کی 3 کمپنیوں کے ساتھ معاہدوں پر دستخط کیے ہیں۔ ان سمجھوتوں کا مقصد مقامی اور بین الاقوامی سطح پر نمو کے مواقع پیدا کرنا ہے۔

مذکورہ کمپنیوں کے ساتھ طے پائے گئے معاہدوں کا تعلق خام تیل اور LNG سے ہے۔

ایڈنوک اتوار کے روز اعلان کر چکی ہے کہ اس نے سپلائی پائپ لائن کے انفرا اسٹرکچر اور تیل کی تقسیم کے شعبوں سے متعلق ایک سمجھوتے پر دستخط کیے ہیں۔ امریکا کی دو سرمایہ کار کمپنیوں کے ساتھ طے پائے گئے سمجھوتے کی مالیت 4 ارب ڈالر کے قریب ہے۔

اس سلسلے میںBlack Rock اورKKR کمپنیوں کے زیر انتظام فنڈز کے کنسورشیم کے پاس نئی کمپنی ADNOC Oil Pipelines کے 40% حصص ہوں گے جب کہ ایڈنوک کمپنی اپنے پاس 60% حصص اور انتظامی امور رکھے گی۔