.

یمن میں 30 حوثی باغی ہلاک، فوج اور حجور قبائل نے کئی علاقے آزاد کرالیے

پہلی اشاعت: آخری اپ ڈیٹ:

یمن میں سرکاری فوج اور حجور قبائل نے شمال مغربی علاقے حجۃ کے کشر ڈاریکٹویٹ میں حوثی باغیوں کے خلاف کارروائی کے دوران 30 باغیوں کو ہلاک کرنے کے بعد کئی اہم مقامات پر قبضہ کرلیا۔کارروائی میں 8 حوثی زخمی ہوئے اور متعدد کو حراست میں لے لیا گیا ہے۔

العربیہ ڈاٹ نیٹ کے مطابق یمنی فوج نے اتوار کے روز حوثیوں کے گڑھ سمجھے جانے والی صعدہ گورنری میں تزویراتی اہمیت کے حامل مزید کئی علاقے باغیوں سے چھڑا لیے۔

کشر ڈاریکٹوریٹ میں حجور قبائل نے حوثیوں‌ کے خلاف خون ریز معرکے کے بعد بنی شوس کے مقام سے باغیوں کو نکال باہر کیا۔

یمنی فوج کی ویب سائیٹ پر پوسٹ کردہ ایک بیان میں کہا گیا ہے کہ اتوار کے روز حوثی باغیوں کے خلاف بنی شوس میں ہونے والی کارروائی میں 10 باغی ہلاک اور 8 زخمی ہوگئے۔ باغی اسلحہ اور گولہ باردو چھوڑ کر فرارہوگئے۔ حجور قبائل اور سرکاری فوج نے باغیوں کا چھوڑا اسلحہ اور گولہ بارود قبضے میں لے لیا۔

ادھر شمال مشرقی علاقے العبیسہ میں عرب اتحادی فوج اور سرکاری فوج نے باغیوں کی ایک گاڑی اور متعدد ٹھکانوں پر بمباری کی جس کےنتیجے میں 20 باغی جنگجو ہلاک ہوگئے۔

ادھر یمنی فوج نے حوثیوں کے گڑھ سمجھے جانے والے علاقے صعدہ میں 'قلۃ زید'، القد اور الحسن کے مقامات سے باغیوں کو نکال باہر کیا۔ مغربی صعدہ کی رازح ڈاریکٹوریٹ میں یہ تینوں مقامات تزویراتی اہمیت کے حامل سمجھے جاتے ہیں۔ باغیوں کی ان علاقوں سے پسپائی سے مزید اہم علاقوں پر حکومتی کنٹرول قائم کرنے میں مدد ملے گی۔

فیلڈ ذرائع کا کہناہے کہ حوثی باغیوں اور یمنی فوج کےدرمیان صعدہ میں متعدد مقامات پرگھمسان کی جنگ ہوئی ہے۔ عرب اتحادی فوج نے مسن القدس کے مقام پر باغیوں کے ٹھکانوں پر بمباری کی۔

یمنی فوج کے بم ڈسپوزل اسکواڈ نے آزاد کرائے گئے علاقوں میں بارودی سرنگوں کی تلاش کے دوران 50 بارودی سرنگیں ناکارہ بنا دیں۔ سرکاری فوج نے صعدہ میں احمد علی، صدام، دمنان اور دیگر قصبوں سے بھی باغیوں کو پسپا کردیا۔