.

سعودی خواتین کو بااختیار بنانے کا سفر جاری رکھا جائے گا: انسانی حقوق کونسل

پہلی اشاعت: آخری اپ ڈیٹ:

سعودی عرب کی انسانی حقوق کونسل کے سربراہ بندر العیبان نے کہا ہے کہ مملکت خواتین کو مقتدر کرنے اور ترقی کے عمل میں خواتین کی شمولیت کا سفر جاری رکھے گی۔ ان کا کہنا تھا کہ حقوق نسواں کا تحفظ اصلاح وترقی کے عمل میں خواتین کی شمولیت کو یقینی بنانے کے لیے تمام ممکنہ اقدامات کریں گے۔

العربیہ کے مطابق سعودی عرب کی انسانی حقوق کونسل کے سربراہ نے جمعرات کو اپنے ایک بیان میں کہا کہ 'ویژن 2030ء میں خواتین کو ترقی کے عمل میں اہم حصہ دار قرار دیا گیا ہے۔ یہ صرف زبانی دعوے نہیں بلکہ سعودی عرب نے خواتین کو مقتدر اور مستحکم کرنے کے لیے مختلف شعبوں میں ان کی خدمات حاصل کی ہیں۔ خواتین نے ریاست کی تعمیر وترقی اور فلاح وبہبود کے حوالے سے اپنی ذمہ داریاں پوری کرنے کے ساتھ کامیابی کے جھنڈے گاڑے ہیں۔

ایک سوال کے جواب میں سعودی انسانی حقوق کونسل کا کہنا ہے کہ خوایتن کے حقوق کا تحفظ حکومت کی پہلی ترجیح ہے۔ اس ضمن میں عدالتی احکامات اور شاہی فرامین بھی موجود ہیں۔ ملک میں تعمیرو ترقی کے مختلف شعبوں خواتین کی نمائندگی یقینی بنانے کے لیے خصوصی اقدامات کیے گئے ہیں۔ اسپیشل سیکٹر، سرکاری شعبوں اور دیگر شعبوں میں خواتین کو ذمہ دارایاں سونپی جا رہی ہیں۔