مغرب نے عورت کو مرد کی شہوت کا کھلونا بنا دیا ہے: ایرانی عالم دین

پہلی اشاعت: آخری اپ ڈیٹ:
مطالعہ موڈ چلائیں
100% Font Size
دو منٹ read

ایران میں ولایت فقیہ کے سخت گیر نظام حکومت میں خواتین کو مذہبی اور سماجی آزادیاں حاصل نہیں مگر اس کے باوجود ایران کے مذہبی رہ نما حقوق نسواں کی پامالی پر مغرب کو تنقید کا نشانہ بناتے ہیں۔

العربیہ ڈاٹ نیٹ کے مطابق خواتین کے عالمی دن کے موقع پر اصفہان شہر میں رہبر انقلاب آیت اللہ علی خامنہ ای کے مندوب محمد تقی رہبر نے کہا کہ خواتین کا حقیقی احترام ایران میں کیاجاتا ہے۔ وہ بھول گئے کہ ایران میں خواتین کو سختی اور جبر کے ساتھ حجاب کرایا جاتا ہے اور حجاب ترک کرنے والی خواتین کو عبرت کا نشان بنا دیا جاتا ہے۔

محمد تقی رھبر نے جمعہ کے اجتماع سے خطاب میں کہا کہ "الحرۃ" اسلامی یونیورسٹی میں حجاب کی پابندی کرنے والی طالبات کو اضافی نمبر دیے جائیں گے۔

انہوں نے مزید کہا کہ مغرب نے عورت کو مرد کی شہوت کا ایک کھلونا بنا دیا ہے۔

خبر رساں ادارے'ایسنا' کے مطابق محمد تقی رھبر نے جامعہ اصفہان کی انتظامیہ کو ہدایت کی کہ وہ یونیورسٹی کی 1500 محجب طالبات کو اضافی نمبر دیں۔

انہوں نے کہا کہ مغرب میں عورت کو آزادی نہیں بلکہ غلامی کی زندگی میں رکھا جاتا ہے۔ان کے حقوق پامال کیے جاتے ہیں۔ خواتین کا کوئی احترام نہیں بلکہ سے مرد کہ شہوت کا ایک کھلونا بنا دیا گیا ہے۔

ایرانی رہ نما کا کہنا تھا کہ مغرب ہمارے ملکوں میں بھی بے حیائی، فحاشی اور عریانی کے راستے کھول رہا ہے۔ ایران میں انقلاب کے خواتین کو تحفظ حاصل ہوا اور اب خواتین کے ساتھ بدسلوکی کے واقعات نہ ہونے کے برابر ہیں۔

مقبول خبریں اہم خبریں

مقبول خبریں