.

حوثی دہشت گردوں نے قیامت ڈھادی، دو خاندانوں کے 41 افراد جاں‌بحق اور زخمی

پہلی اشاعت: آخری اپ ڈیٹ:

یمن میں ایران نواز حوثی ملیشیا نے حجۃ‌گورنری کے شمالی مغربی علاقے کشر میں حجور قبائل کے خلاف لڑائی کے دوران دو خاندانوں کے 40 سے زاید افراد کو قتل اور زخمی کردیا ہے۔ مقتولین میں بڑی تعداد میں خواتین اور بچے بھی شامل ہیں۔

العربیہ چینل کے ذرائع کے مطابق حوثی باغیوں نے کشر میں وحشیانہ حملے میں الھادی خاندان کی 12 خواتین سمیت متعدد افراد کو قتل کردیا جب کہ حدب خاندان کی 8 خواتین قتل کردی گئی ہیں۔

ذرائع کا کہنا ہے کہ مقتولین میں ایک ماہ سے 13 سال کے درمیان کی عمر کےکئی بچے بھی شامل ہیں۔

ذرائع کا کہنا ہے کہ حوثیوں کی ظرف سے حجور قبیلے کے افراد کا وحشیانہ کریک ڈائون جاری ہے۔ باغیوں نے قبیلے کے عمر رسیدہ افراد، خواتین اور بچوں سمیت سیکڑوں کو اغواء کرلیا ہے۔ باغیوں کی طرف سے حراست میں لیے گئے شہریوں کو اسکولوں میں منتقل کرنے کے بعد ایک بڑی جیل میں ڈال دیا گیا ہے۔

حوثی باغیوں کی طرف سے گذشتہ جمعرات سے کے روز سے کشر میں جاری وحشیانہ کارروائی میں شہریوں‌کے 52 مکانات کو دھماکوں سے اڑا دیا گیا ہے۔