مسجد اقصٰی پر دھاوے، اسرائیل مسلمانوں کے جذبات سے کھیل رہا ہے:الازھر

اسرائیل کو فلسطینیوں اور قبلہ اول پرپابندیوں کا کوئی حق نہیں

پہلی اشاعت: آخری اپ ڈیٹ:
مطالعہ موڈ چلائیں
100% Font Size
دو منٹ read

مصر کی سب سے بڑی دینی درس گاہ جامعہ الازھر نے مسجد اقصیٰ پر یہودی فوجیوں اور آباد کاروں کے دھاووں، مسجد کو بند کرنے اور نمازیوں پر وحشیانہ تشدد کی شدید مذمت کی ہے۔

العربیہ ڈاٹ نیٹ کے مطابق جامعہ الازھر کی طرف سے جاری کردہ ایک بیان میں کہا گیا ہے کہ صہیونی ریاست مسجد اقصٰی کی بے حرمتی اور نمازیوں پر پابندیاں عاید کرکے مسلمانوں کے مقدس مقامات کی حرمت کو پامال کرتےہوئے عالم اسلام کےجذبات کو مشتعل کررہی ہے۔ بیان میں کہا گیا ہے کہ صہیونی فوج کی طرف سے نہتے فلسطینی نمازیوں کے خلاف طاقت کا وحشیانہ استعمال، مسجد میں نماز کی ادائی میں رکاوٹیں پید اکرنا اور مقدس مقام کو بند کرنا مسلمانوں کے جذبات کو مشتعل کرنے کی مذموم کوشش ہے۔

جامعہ الازھر کا کہنا ہے کہ فلسطینی مسلمانوں کو عزت، وقار اور آزادی کے ساتھ اپنے تمام مقدسات میں عبادت کرنے کا حق ہے اور اسرائیل ان سے یہ حق نہیں چھین سکتا۔ بیان میں عالمی برادری پر زوردیا گیا ہے کہ وہ اسرائیل کو القدس اور قبلہ اول کے حوالے سے عالمی قراردادوں کا پابند بنانے کے لیے تل ابیب پر دبائو ڈالے۔

بیان میں خبردار کیا گیا ہے کہ عالمی برادری کی طرف سے اسرائیلی ریاست کے جرائم پرخاموشی اور صہیونیوں کے جرائم نہ صرف خطے بلکہ پوری دنیا میں عدم استحکام کا موجب بن سکتے ہیں۔

مقبول خبریں اہم خبریں

مقبول خبریں