.

یمنیوں کا درد رکھنے والے عرب اتحاد کی مدد کریں: پومپیو

پہلی اشاعت: آخری اپ ڈیٹ:

امریکی وزیر خارجہ مائیک پومپیو کا کہنا ہے کہ ان کا ملک یمن میں سعودی عرب کی قیادت میں آئینی حکومت کی رٹ بحالی کے لئے سرگرم عرب اتحاد کی حمایت کرتا ہے۔ صدر ڈونلڈ ٹرمپ کی انتظامیہ ریاض کی سربراہی میں مصروف عمل اتحاد کی امداد روکنے کے مطالبات کو مسترد کرتا ہے۔

واضح رہے کہ امریکی وزیر خارجہ کا یہ بیان انتہائی اہمیت کا حامل ہے کیونکہ حال ہی میں امریکی سینیٹ نے ایک ایسا قانون منظور کیا ہے جس میں امریکا کو یمن کی جنگ میں سعودی عرب کی مدد کو ختم کرنے کا کہا گیا ہے۔یہ قانون سینیٹ نے 46 کے مقابلے میں 56 ووٹوں سے منظور کیا گیا تھا۔ امریکی صدر ڈونلڈ ٹرمپ پہلے ہی کہہ چکے ہیں کہ اگر ایوان نمائندگان نے بھی اس پاس کردیا تو وہ اسے ویٹو کر دیں گے۔

مائیک پومپیو نے مزید کہا کہ یمن میں عرب اتحاد کی مدد کرنا اس لئے ضروری ہے کہ مبادہ یمن ایرانی تسلط میں نہ چلا جائے اور ایک ریاست نہ بن سکے کہ جسے ایران کا کرپٹ حکومتی ٹولہ اپنی مرضی سے چلا سکے۔ انھوں نے کہا کہ سعودی عرب نے یمن اور اس کے عوام کے لئے اربوں ڈالر کی امداد دی ہے۔

انھوں نے یہ بات زور دے کر کہی کہ اسٹاک ہوم معاہدے پر عمل درآمد کرایا جائے۔ ’’جن لوگوں کو یمنیوں کے حقوق اور زندگی کی فکر لاحق ہے، انہیں چاہئے کہ وہ سعودی قیادت میں عرب اتحاد کی مدد کریں۔‘‘ انھوں نے امریکی کانگریس کے ان ارکان پر کڑی تنقید کی کہ جو یمن میں سرگرم عرب اتحاد کی امداد رکوانے کی کوشش کر رہے ہیں۔