براکہ نیوکلیئر پاور اسٹیشن کے حوالے سے قطر کے دعوؤں کو مسترد کرتے ہیں : امارات

پہلی اشاعت: آخری اپ ڈیٹ:
مطالعہ موڈ چلائیں
100% Font Size
1 منٹ read

متحدہ عرب امارات کی جانب سے جاری ایک سرکاری بیان میں براکہ نیوکلیئر پاور اسٹیشن کی سلامتی کے مسائل سے متعلق دعوؤں کو مسترد کر دیا گیا ہے۔

ایٹمی توانائی کی عالمی ایجنسی میں امارات کے مستقل مندوب حمد علی الکعبی کی جانب سے جاری بیان میں باور کرایا گیا ہے کہ امارات میں نیوکلیئر اسٹیٹ پالیسی 2008 کے مطابق جوہری پروگرام کے حوالے سے نیوکلیئر سیفٹی اینڈ سکیورٹی اور جوہری عدم پھیلاؤ کی اعلی سطح پر پاسداری کی جا رہی ہے۔ مندوب کے مطابق براکہ اسٹیشن تھرڈ نیوکلیئر جنریشن ٹکنالوجی کا استعمال کر رہا ہے اور وہاں ایٹمی توانائی کی عالمی ایجنسی کے مقرر کردہ معیار نافذ کیے گئے ہیں۔

اس سے قبل قطر نے ایٹمی توانائی کی عالمی ایجنسی کو امارات میں زیر تعمیر نیوکلیئر پاور اسٹیشن کے خطرات کے حوالے سے باقاعدہ شکایت پیش کی تھی۔ اس سلسلے میں تحریر کیے گئے خط میں کہا گیا تھا کہ اماراتی نیوکلیئر اسٹیشن علاقائی استحکام اور ماحولیات کے لیے ایک بڑا خطرہ ہے۔

قطر کا یہ بھی کہنا تھا کہ کسی بھی حادثے کی صورت میں تابکاری کے حامل مواد کا غبار 5 سے 13 گھنٹوں میں دوحہ پہنچ سکتا ہے ،،، اور تابکاری کے افشا ہونے کے علاقے میں پانی کے ذخیرے پر تباہ کرن اثرات ہوں گے۔

مقبول خبریں اہم خبریں

مقبول خبریں