حوثی ملیشیا نے افریقی جنگجووں کوبھرتی کرنا شروع کردیا

پہلی اشاعت: آخری اپ ڈیٹ:
مطالعہ موڈ چلائیں
100% Font Size
دو منٹ read

یمن میں آئینی حکومت کا تختہ الٹنےوالی حوثی ملیشیا جنگ کے باعث غیرمعمولی افرادی قلت کا شکار ہے اورافرادی قوت کی کمی پوری کرنے کے لیے اب ملک میں موجود افریقی شہریوں کو جنگ کا ایندھن بنایا جا رہا ہے۔

العربیہ ڈاٹ نیٹ کے مطابق حوثی ملیشیا نے الحدیدہ شہر میں جنگ کے باعث جنگجوئوں کی بڑی تعداد کھو دینے کے بعد افریقی شہریوں کو بھرتی کرنے اور انہیں عسکری تربیت دینا شروع کی ہے۔

رپورٹ کے مطابق حوثی ملیشیا نے افریقی باشندوں کی مجبوریوں سےفایدہ اٹھا کر انہیں جنگ کا ایندھن بنانے کے حربے استعمال کرنا شروع کیے ہیں۔حوثی باغیوں نے اپنے زیرتسلط علاقوں میں رہنے والے افریقی تارکین وطن کو بھرتی کرنے اور انہیں یمن کی آئینی حکومت کے خلاف لڑنے کے لیے تیار کرنا شروع کیا ہے۔ذرائع کے مطابق حوثی باغی یمن کے بیشتر علاقوں سے افریقی نوجوانوں کو جمع کررہے ہیں۔ یہ افریقی اپنے ملکوں میں ابتر معاشی حالات اور خانہ جنگی کے باعث فرار ہو کر یمن میں آباد ہوئے ہیں مگر اب وہ حوثی ملیشیا کی جنگ کا ایندھن بن رہے ہیں۔

حوثی ملیشیا کی طرف سے افریقی شہریوں کو بندوق اٹھانے اور اپنی صفوں میں شامل کرنے کے عوض مالی مراعات اور دیگر پرکشش پیکجزکی پیش کش کرکے انہیں اپنے ساتھ ملاتے ہیں۔ انہیں بھرپور مالی معانت فراہم کرنے کی یقین دہانی کی جاتی اور جنگ کے لیے بھرتی ہونےوالوں کے خاندانوں کی کفالت کی پیش کش کی جاتی ہے۔

خیال رہےکہ حوثی ملیشیا کو ملک میں حکومت کے خلاف لڑنے کے لیے افرادی قوت کی سخت قلت کا سامنا ہے جس کے باعث وہ کبھی بچوں کو جنگ کا ایندھن بناتے ہیں اور کبھی غیرملکی افریقی باشندوں کو استعمال کرتےہیں۔

مقبول خبریں اہم خبریں

مقبول خبریں