مصرکی کامیاب مساعی سے غزہ میں حماس اور اسرائیل میں جنگ بندی

پہلی اشاعت: آخری اپ ڈیٹ:
مطالعہ موڈ چلائیں
100% Font Size
دو منٹ read

فلسطین کے علاقے غزہ کی پٹی میں گذشتہ روز اس وقت جنگ کی حالت پیدا ہوئی تھی جب غزہ سے دو میزائل اسرائیل کے دارالحکومت تل ابیب پر داغے گئے۔ اس کے بعد اسرائیل نے غزہ کی پٹی میں حماس کے ٹھکانوں پر شدید بمباری شروع کردی تھی تاہم مصر نےمداخلت کرکے غزہ میں فریقین میں جنگ بندی کرادی۔

العربیہ ڈاٹ نیٹ کے مطابق غزہ میں حماس کے ترجمان نے بتایا کہ مصر کی کامیاب کوششوں کے بعد فلسطینی مزاحمتی تنظیموں اور اسرائیل میں جنگ بندی ہوگئی ہے۔

فلسطینی ذرائع نے'العربیہ' چینل کو بتایا کہ جنگ بندی منگل کی شب مقامی وقت کے مطابق رات10 بجے نافذ ہوگئی تھی۔
ادھر قاہرہ میں العربیہ کے نامہ نگار کے مطابق غزہ میں کشیدگی کے بعد مصری حکومت نے فوری طورپر فریقین سے رابطہ کیا اور ان سے کشیدگی کم کرنے اور تحمل سے کامل لینے کا مطالبہ کیا۔ حماس اور اسرائیل پرزور دیا گیا کہ وہ ایک دوسرے پر حملے بند کردیں۔

غزہ میں کشیدگی کے بعد مصری سیکیورٹی حکام نے فوری طور پراسرائیلی حکام کے ساتھ رابطے شروع کردیے۔ قاہرہ نے تل ابیب سے مطالبہ کیا کہ وہ غزہ میں فوجی کارروائی بند کرے۔

نامہ نگار کے مطابق مصر نے فلسطینیوں اور اسرائیل کو دھمکی دی کہ اگر انہوں نے کشیدگی ختم نہ کی تو قاہرہ مصالحتی کوششیں ترک کردے گا۔

خیال رہے کہ سوموار کو علی الصباح اسرائیل کے دارالحکومت تل ابیب میں میزائل حملوں کے بعد اسرائیل نے غزہ پر بمباری کی تھی جس کےنتیجے میں پانچ فلسطینی زخمی ہوگئے تھے۔ گذشتہ روز غزہ سے 10 راکٹ داغے گئے۔ جنوبی اسرائیل اور سرحدی علاقوں میں بار بار خطرے کے سائرن بجتے رہے۔ اسرائیلی فوج کا کہنا ہے کہ اسرائیل کے آئرن ڈوم نے فلسطینیوں کے داغے گئے متعدد راکٹ تباہ کردیے۔

مقبول خبریں اہم خبریں

مقبول خبریں