بین الاقوامی قوانین کے ذریعے اسرائیل کا گھیرائو کریں گے: عرب سربراہ کانفرنس

پہلی اشاعت: آخری اپ ڈیٹ:
مطالعہ موڈ چلائیں
100% Font Size
1 منٹ read

تیونس میں ہونے والی عرب سربراہ کانفرنس کے ترجمان محمود الخمیری نے کہا ہے کہ قضیہ فلسطین عرب قیادت کے سربراہ اجلاس کے ایجنڈے کا اہم ترین موضوع ہے اور اسے غیرمعمولی اہمیت دی جائے گی۔

جمعہ کے روز تیونس میں ایک پریس کانفرنس سے خطاب میں محمود الخمیری نے کہا کہ عرب ممالک عن قریب مشرق وسطیٰ میں امن فارمولے کا اعلان کریں گے۔ ان کا کہنا تھا کہ ہم اسرائیل کا بین الاقوامی قانون کے ذریعے تعاقب کریں گے۔ عرب ممالک کی طرف سے قضیہ فلسطین کے منصفانہ حل کے حوالے سے واضح اور موثر کوششیں کی جا رہی ہیں۔ عرب ریاستیں مسئلہ فلسطین کے منصفانہ اور دیر پا حل کے حوالے سے اپنی ذمہ داریوں کی انجام دہی کی پابند ہیں۔

ایک سوال کے جواب میں انہوں نے کہا کہ شام میں اقوام متحدہ کی جانب سے امن مساعی کو آگے بڑھانے کے لیے عرب ممالک بھرپور تعاون کر رہے ہیں۔

الخمیری نے کہا کہ شام کے معاملے میں عرب ممالک کی طرف سے غیرمعمولی سرگرمیاں دیکھی جا رہی ہیں تاہم شام کی عرب لیگ میں واپسی کے حوالے سے اتفاق رائے نہیں ہو سکا۔ لیبیا کے بارے میں‌ بات کرتے ہوئے انہوں نے کہا کہ لیبیا کے حوالے سے عرب ملکوں کے متوقف میں کوئی تضاد نہیں۔

مقبول خبریں اہم خبریں

مقبول خبریں