مصر : چرچ پر خودکش بم حملے کی سازش، 30 افراد کو10 سال سے عمر قید تک جیل کی سزائیں

پہلی اشاعت: آخری اپ ڈیٹ:
مطالعہ موڈ چلائیں
100% Font Size
4 منٹس read

مصر میں ایک عدالت نے ساحلی شہر اسکندریہ میں ایک چرچ پر خودکش بم حملے کی سازش کےا لزام میں تیس ملزموں کو قصور وار قرار دے کر دس سال سے عمر قید تک جیل کی سزائیں سنائی ہیں۔

اسکندریہ کی فوجداری عدالت کے سربراہ نے ہفتے کے روز ان میں سے اٹھارہ ا فراد کو عمر قید کی سزا سنائی ہے۔ مصر میں عمر قید کی مدت پچیس سال ہے۔آٹھ افراد کو پندرہ ، پندرہ سال قید کا حکم دیا ہے اور چار کو دس ،دس سال قید کی سزا سنائی ہے۔ اس عدالت نے دارالحکومت قاہرہ میں ان کے خلاف مقدمے کی سماعت کی اور فیصلہ سنایا ہے۔

عدالت میں فیصلے کے اعلان کے وقت بیس مدعاعلیہان حاضر تھے ۔انھوں نے قیدیوں والا سفید لباس پہن رکھا تھا۔انھوں نے اپنے خلاف سزاؤں پر کسی ردعمل کا اظہار نہیں کیا۔ ان کے خلاف مقدمے کی پیروی کرنے والے وکلاء نے بھی فوری طور پر عدالتی فیصلے پر تبصرہ نہیں کیا ہے۔دس مدعا علیہان مفرور ہیں اور انھیں ان کی عدالت میں عدم موجودگی میں سزا سنائی گئی ہے۔

استغاثہ کے مطابق ان افراد نے اسکندریہ میں ایک گرجا گھر پر خودکش بم حملے کی سازش کی تھی لیکن اس کو عملی جامہ پہنانے میں ناکام رہے تھے۔ان مدعاعلیہان پر ساحلی شہر دمیاطہ میں ایک شراب خانے کو بم سے اڑانے کی منصوبہ بندی ،غیر قانونی گروپ میں شمولیت اور ہتھیار اور گولہ بارود رکھنے کے الزامات میں بھی فرد جرم عاید کی گئی تھی۔مصری حکام نے ان افراد کی گرفتار ی کے وقت کہا تھا کہ انھوں نے انتہا پسند گروپ داعش کے نظریے کو قبول کیا تھا اور مصر اور بیرون ملک عسکری تربیت حاصل کی تھی۔

واضح رہے کہ اسکندریہ اور مصر کے دوسرے شہروں میں انتہا پسند گروپوں نے قبطی عیسائیوں کے گرجا گھروں پر متعدد خودکش بم حملے کیے ہیں یا قبطیوں کو فائرنگ میں نشانہ بنایا ہے۔داعش نے اپریل 2017ء میں اسکندریہ اور طنطا میں گرجا گھروں پر خودکش بم حملوں کی ذمے داری قبول کی تھی۔ان دونوں شہروں میں بم دھماکوں میں پینتالیس افراد ہلاک ہوگئے تھے۔

مصر کی سکیورٹی فورسز نے 2014ء میں صدر عبدالفتاح السیسی کے برسراقتدار آنے کے بعد سے انتہا پسند گروپوں کے خلاف کریک ڈاؤن شروع کررکھا ہے اور شورش زدہ صوبے شمالی سیناء دارالحکومت قاہرہ اور دوسرے علاقوں میں سکیورٹی فورسز کی کارروائیوں میں سیکڑوں جنگجو مارے جا چکے ہیں۔

مقبول خبریں اہم خبریں

مقبول خبریں