.

الحدیدہ میں حوثیوں کا "مارٹر" حملہ ، التحیتا میں دراندازی کی کوشش ناکام

پہلی اشاعت: آخری اپ ڈیٹ:

یمن میں مقامی آبادی نے اتوار کی شب بتایا کہ الحدیدہ شہر میں رہائشی علاقوں میں تعینات باغی حوثی ملیشیا کے ارکان نے شہر کے مشرقی حصے میں واقع علاقوں پر کثرت سے مارٹر گولے داغے۔ الحدیدہ میں مشرقی حصے میں کئی مقامات پر مشترکہ فورسز کا کنٹرول ہے۔

الحدیدہ شہر میں حوثی ملیشیا کی جانب سے بڑے پیمانے پر مسلح جارحیت دیکھنے میں آئی ہے۔ ملیشیا نے گزشتہ گھنٹوں کے دوران شارع صنعاء اور شہر کے اطراف مشترکہ فورسز کی مزاحمت کے علاقوں کی سمت کئی حملے کیے۔ تاہم اسے ناکامی کے ساتھ ہلاکتوں اور زخمیوں کی صورت میں جانی نقصان کا بھی سامنا کرنا پڑا۔

اس سلسلے میں العمالقہ بریگیڈز کے یونٹوں نے اتوار کی شام الحدیدہ صوبے کے جنوبی ضلع التحیتا میں مشترکہ فورسز کے ٹھکانوں پر حوثی ملیشیا کے حملے کو پسپا کر دیا۔ اس دوران باغیوں نے کئی مارٹر گولے داغے تاہم مشترکہ مزاحمتی فورسز نے حملے کو ناکام بنا دیا اور حوثیوں کو بھاری نقصان اٹھانا پڑا۔

ایرانی حمایت یافتہ ملیشیا کی جانب سے یہ منظم جارحیت دراصل سویڈن معاہدے کی پاسداری سے فرار کی کوششوں میں شامل ہے۔ بالخصوص ہفتے کے روز اقوام متحدہ کے مبصر مشن کے سربراہ ڈینش جنرل مائیکل لولزگارڈ اور حکومتی ٹیم کے اجلاس کے بعد جس میں نئے منصوبے کے تحت از سر نو صف بندی کے حوالے سے تکنیکی پہلوؤں کو حتمی شکل دی گئی۔