.

ایران عرب دارالحکومتوں پراپنا تسلط جمانا چاہتا ہے: یمنی صدر

پہلی اشاعت: آخری اپ ڈیٹ:

یمن کے صدر عبد ربہ منصور ھادی نے الزام عاید کیا ہے کہ ایران عرب ممالک کے دارالحکومتوں پر قبضے کی سازشیں کررہا ہے۔ ان کا کہنا ہے کہ یمن میں حوثیوں کو اسلحہ اور فوجی امداد کے ذریعے حکومت کےخلاف بغاوت پر اکسایا گیا اور اس سازش میں بھی ایران کا اہم کردار ہے۔

تیونس میں عرب سربراہ اجلاس سے خطاب میں صدر ھادی نے کہا کہ حوثی حوثیوں نے یمنی قوم کے لیے مصیبتیں کھڑی کیں۔ انہوں‌نے صنعاء کو حکومت سے طاقت کے ذریعے چھین کر اسے ایک بڑی جیل میں تبدیل کردیا ہے۔
صدر ھادی کا کہنا تھا کہ حوثی ملیشیا نے یمن کے تمام شہروں کو تاخت وتاراج کرنے اور عوام کی روز مرہ زندگی کو تباہ کرنے میں کوئی کسر باقی نہیں چھوڑی۔ حوثی ملیشیا نے خود کو ایرانی دشمن کےپلڑے میں ڈال کر یمنی قوم کو نقصان پہنچایا۔ حوثیوں کے ذریعے صنعاء پرقبضے کےبعد ایران یہ دعویٰ کررہا ہے کہ وہ چار عرب دارالحکومتوں پر قبضہ جمائے ہوئے ہے۔

صدر ھادی نے کہا کہ یمن کی آئینی حکومت امن کی مخالف نہیں بلکہ حکومت بامقصد بات چیت میں پیش پیش رہی ہے مگر دوسری طرف ایرانی حمایت یافتہ حوثیوں نے امن اور مفاہمت کی تمام کوششیں سبوتاژ کیں۔ چار ماہ قبل اسٹاک ہوم میں طے پائے معاہدے پرعمل درآمد سے حوثی باغیوں نے انکار کیا۔

انہوں‌نے کہا کہ حوثی باغیوں کی طرف سے تمام اہم راستوں کی ناکہ بندی اور قبضے کے باوجود آئینی حکومت نے جنگ سے متاثرہ علاقوں میں کی فراہمی کو یقینی بنانے کی کوششیں جاری رکھی ہوئی ہیں۔