.

سعودی عرب میں اسمبل کیے جانے والے پہلے "ہاک" تربیتی طیارے کا افتتاح

پہلی اشاعت: آخری اپ ڈیٹ:

سعودی ولی عہد اور وزیر دفاع شہزادہ محمد بن سلمان بن عبدالعزيز نے اتوار کے روز دہران میں شاہ عبدالعزیز ایئر بیس پر "ہاک" ساخت کے تربیتی جیٹ طیارے کا افتتاح کیا۔ اس طیارے کی خاص بات یہ ہے کہ اس کے بعض اجزاء کی تیاری اور اسمبلنگ مقامی طور پر سعودی انجینئروں کے ہاتھوں عمل میں آئی ہے۔

اس موقع پر شہزادہ سلمان کو "ہاک" طیارے کی اسمبلنگ، مرکزی اجزاء کی مقامی طور پر تیاری اور اسمبلنگ کے بعد طیارے کی جانچ کے مراحل سے آگاہ کیا گیا۔ علاوہ ازیں ولی عہد کو متعلقہ ٹکنالوجی کی مملکت منتقلی کے سلسلے میں سعودی برطانوی پروگراموں کے بارے میں بھی بتایا گیا۔ سعودی نوجوان عالمی تجربے اور مہارت کی دو سال سے زیادہ تربیت حاصل کرنے کے بعد ہاک ساخت کے 22 طیاروں کی اسمبلنگ پر کام کر رہے ہیں۔ اس پیش رفت کا مقصد مملکت میں حربی صنعت کو فروغ دینا، قومی معیشت کو سپورٹ کرنا اور روزگار کے مواقع پیدا کرنا ہے۔ یہ سعودی ویژن 2030 پروگرام کے اہم ترین اہداف میں شامل ہے۔

شہزادہ بن سلمان نے طیارے کی نقاب کشائی کی اور طیارے کے اگلے حصے پر دستخط کیے۔

بعد ازاں سعودی ولی عہد طیارے کی اڑان کا منظر دیکھنے کے لیے اسٹیج پر آئے جہاں طیارے کے کپتان نے شہزادہ محمد بن سلمان نے وائر لیس پر اڑان کی اجازت طلب کی۔ سعودی ولی عہد نے اجازت دیتے ہوئے کہا کہ "بسم الله وعلى بركة الله"۔

سعودی برطانوی دفاع تعاون پروگرام نے(BAE SYSTEMS) کمپنی کے ساتھ مل کر سعودی نوجوانوں کی تربیت کی نگرانی کی۔ اس عمل میں 25 سے زیادہ سعودی مقامی کمپنیاں شریک رہیں۔