حوثیوں نے جنرل لولزگارڈ کو الحدیدہ کے مشرقی حصے میں پہنچنے سے روک دیا

پہلی اشاعت: آخری اپ ڈیٹ:
مطالعہ موڈ چلائیں
100% Font Size
دو منٹ read

یمن میں العربیہ کے نمائندے نے منگل کے روز بتایا ہے کہ حوثی ملیشیا نے اقوام متحدہ کے مبصر مشن کے سربراہ جنرل مائیکل لولزگارڈ کو الحدیدہ شہر کے مشرق میں سرکاری فورسز کے زیر کنٹرول علاقوں میں جانے سے روک دیا۔ لولزگارڈ کو وہاں الحدیدہ میں نئی صف بندی سے متعلق کمیٹی میں شامل حکومتی ٹیم کے ارکان کے ساتھ ایک اجلاس میں شریک ہونا تھا۔

یہ پہلی مرتبہ نہیں ہے جب حوثی ملیشیا نے اقوم متحدہ کے مبصر مشن کے سربراہ کی یمنی حکومت کے وفد سے ملاقات میں رکاوٹ کھڑی کی ہو۔

دوسری جانب حوثی ملیشیا نے منگل کی صبح عالمی ادارہ خوراک کی ٹیم کو یمنی حکومت کے زیر کنٹرول علاقوں میں واقع بحر احمر فلور ملز کمپلیکس تک پہنچنے سے روک دیا۔ یہ ٹیم مذکورہ ملوں کو دوبارہ چلانے اور وہاں موجود گوداموں سے غلے کا ذخیرہ نکال کر متاثرین تک منتقل کرنے کے لیے کوشاں ہے۔

زمینی ذرائع کے مطابق حوثی ملیشیا نے عالمی ادارہ خوراک کے اہل کاروں کو بحر احمر فلور ملز تک جانے سے روک دیا۔

یاد رہے کہ اقوام متحدہ نے گزشتہ ماہ خبردار کیا تھا کہ بحر احمر کی فلور ملز کے گوداموں میں موجود عالمی ادارہ خوراک کے گندم کے بیجوں کے خراب ہو جانے کا خطرہ درپیش ہے۔ اقوام متحدہ نے حوثی ملیشیا پر الزام عائد کیا تھا کہ اس نے گزشتہ برس ستمبر سے آج تک متعلقہ اہل کاروں کو بحر احمر کی فلور ملز کے گوداموں تک جانے کی اجازت نہیں دی۔

مقبول خبریں اہم خبریں

مقبول خبریں