.

اسرائیل کو 1982ء میں لبنان جنگ کے دوران میں لاپتا فوجی کی لاش مل گئی ،کیسے ؟

پہلی اشاعت: آخری اپ ڈیٹ:

اسرائیل نے بدھ کے روز 1982ء میں لبنان جنگ کے دوران میں لاپتا ہونے والے ایک فوجی کی لاش ملنے کا اعلان کیا ہے۔

اسرائیلی فوج کے ترجمان جوناتھن کونریکس نے ایک ٹویٹ میں اس فوجی کی لاش واپس ملنے کی اطلاع دی ہے اور کہا ہے کہ ایسا ایک ’’ خفیہ انٹیلی جنس کارروائی ‘‘ کے ذریعے ممکن ہوسکا ہے۔

فوجی ترجمان کا کہنا تھا کہ سارجنٹ فرسٹ کلاس زیچرے بومل سلطان یعقوب جنگ کے وقت سے لاپتا تھا۔تاہم ترجمان نے یہ بتانے سے گریز کیا ہے کہ اس فوجی کی باقیات کی کیونکر واپسی ممکن ہوئی ہے۔فرسٹ سارجنٹ بومل امریکا میں پیدا ہوا تھا لیکن وہ بعد میں نقل مکانی کرکے اسرائیل منتقل ہوگیا تھا۔

العربیہ کے نمایندے نے اطلاع دی ہے کہ اسرائیل ایک تیسرے ملک کی مدد سے اس فوجی کی لاش واپس لینے میں کامیاب ہوا ہے۔یہ فوجی جنگ کے دوران میں لبنان کی وادی بقاع میں لاپتا ہوا تھا۔

العربیہ کے نمایندے نے مزید کہا ہے کہ اسرائیل کو روس کی ثالثی کے نتیجے میں لبنان میں غائب ہونے والے اس فوجی کی باقیات کا تابوت ملا ہے۔