.

یمن : حوثیوں کے متروکہ گرینیڈ سے اسکول کے طلبہ خون میں لت پت

پہلی اشاعت: آخری اپ ڈیٹ:

یمن میں دارالحکومت صنعاء کے شمال مغرب میں ایک اسکول کے اندر دھماکے کے نتیجے میں 3 طلبہ جاں بحق اور 14 زخمی ہو گئے۔ یہ واقعہ بدھ کے روز ہمدان ضلع کے اسکول کی کلاس کے اندر اس وقت پیش آیا جب حوثی ملیشیا کا متروکہ ایک طیارہ شکن میزائل گرینیڈ دھماکے سے پھٹ گیا۔ دھماکے کے وقت بچے اس سے کھیل رہے تھے۔

مقامی ذرائع کے مطابق ایک طالب علم کو بدھ کی صبح اسکول آتے ہوئے یہ راکٹ گرینیڈ راستے میں پڑا ہوا ملا تھا۔ وہ طالب علم اسے اٹھا کر اپنے ساتھ کلاس کے اندر لے آیا۔ بعد ازاں طالب علم کلاس میں اس گرینیڈ کے ساتھ کھیلنے لگ گیا۔ اس دوران اس نے گرینیڈ کو بلیک بورڈ پر دے مارا جس کے نتیجے میں وہ دھماکے سے پھٹ گیا۔ دھماکے کے نتیجے میں کلاس میں موجود طلبہ میں سے تین کی جان چلی گئی اور 14 زخمی ہو گئے۔ زخمی ہونے والوں میں گرینیڈ سے کھیلنے والا طالب علم شامل ہے۔ دھماکے سے اس کا ہاتھ کلائی سے علاحدہ ہو گیا۔

ذرائع کا کہنا ہے کہ زخمیوں کو دارالحکومت صنعاء کے ایک ہسپتال میں منتقل کر دیا گیا جن میں سے بعض کی حالت تشویش ناک ہے۔

ذرائع کے مطابق مذکورہ گرینیڈ حوثیوں کی جانب سےدوران جنگ چھوڑے ہوئے ہتھیاروں میں سے ہے۔ حوثی باغی اسے طیاروں کے خلاف خصوصی ہتھیار کے طور پر استعمال میں لا رہے تھے۔

حوثیوں کی جانب سے دوران جنگ چھوڑے ہوئے ہتھیاروں کے سبب اب تک درجنوں یمنی شہری جاں بحق اور زخمی ہو چکے ہیں جن میں اکثریت بچوں کی ہے۔