قطر نے پاسداران انقلاب کو دہشت گرد قرار دینے کا امریکی فیصلہ مسترد کردیا

پہلی اشاعت: آخری اپ ڈیٹ:
مطالعہ موڈ چلائیں
100% Font Size
1 منٹ read

امریکا کی جانب سے ایران کی طاقت ور فورس سپاہ پاسداران انقلاب کو دہشت گرد قرار دیے جانے کے فیصلے پر بیشتر خلیجی ممالک نے خیرمقدم کیا ہے مگر قطر نے اس فیصلے پر شدید تنقید کرتے ہوئے اسے مسترد کردیا ہے۔

العربیہ ڈاٹ نیٹ کے مطابق قطری وزیرخارجہ محمد بن عبدالرحمان آل ثانی نے ایک بیان میں کہا ہے کہ واشنگٹن کا پاسداران انقلاب کو عالمی دہشت گرد فورس قرار دینے کا فیصلہ یک طرفہ اقدام ہے۔ اس طرح کے اقدامات سے دنیا کی کوئی خدمت نہیں کی جاسکتی۔

خیال رہے کہ سوموار کو امریکی صدر ڈونلڈ ٹرمپ نے ایران کی پاسداران انقلاب کو غیرملکی دہشت گرد تنظیم قرار دیا تھا۔ یہ پہلا موقع ہے جب واشنگٹن نے کسی ملک کی فوج کو باضابطہ طورپر پاسداران انقلاب کو دہشت گرد قرار دیا ہے۔

امریکی صدر ٹرمپ کا کہنا ہے کہ پاسدران انقلاب حکومت کے ہاتھ میں عالمی سطح پر دہشت گردی کی کارروائیوں کو عملی شکل دینے کے لیے ایک آلہ کار ہے۔

دوسری خلیجی ممالک سعودی عرب ، بحرین اور یمن نے پاسداران انقلاب کو دہشت گرد قرار دینے کے امریکی فیصلے کا خیر مقدم کیا ہے اور کہا ہے کہ اس فیصلے سے عالمی سطح ایرانی دہشت گردی کو لگام دینے اور خطے میں ایرانی مداخلت کی روک تھام میں مدد ملے گی۔

مقبول خبریں اہم خبریں

مقبول خبریں