.

مقبوضہ بیت المقدس کے فلسطینی گورنرعدنان غیث ضمانت پر رہا

پہلی اشاعت: آخری اپ ڈیٹ:

قابض اسرائیلی پولیس نے مقبوضہ بیت المقدس ے فلسطینی گورنر عدنان غیث کو چار ماہ حراست میں رکھنے کے بعد گذشتہ روز رہا کردیا۔

عدنان غیث کو اسرائیلی پولیس نے نومبر 2018ء کو ان کی رہائش گاہ سے حراست میں لینے کے بعد ان کے خلاف فوجی احکامات کےتحت عدالتی کارروائی شروع کی تھی۔

عدنان غیث کی یہ پہلی گرفتاری اور رہائی نہیں بلکہ حالیہ عرصے میں وہ متعدد بار اراضی کی فروخت کے الزامات میں گرفتار کیے جاتےرہےہیں۔

ان کے وکیل محمد محمود نے بتایا کہ صہیونی حکام نے ان کے موکل کو مشروط طورپر رہاکیا ہے۔ اسرائیلی پولیس کی طرف سے انہیں چھ ماہ تک غرب اردن داخل نہ ہونے اور مخصوص افراد کے ساتھ رابطے کے علاوہ کسی سے رابطہ نہ کرنے کا حکم دیا ہے۔

اسرائیلی پولیس کے ترجمان میکی روزنلفیڈ نے عدنان غیث کی گرفتاری ان سے تفتیش کی تصدیق کی ہے۔

فلسطین کی سرکاری نیوز ایجنسی کےمطابق عدنان غیث یو 1000 شیکل ضمانت پر رہا کرنے کا فیصلہ کیا گیا ہے۔