امارات میں ڈاک کے ایک دفتر سے لیک ہونے والی تصویر پرالشیخ محمد بن راشد برہم

پہلی اشاعت: آخری اپ ڈیٹ:
مطالعہ موڈ چلائیں
100% Font Size
1 منٹ read

متحدہ عرب امارات کے نائب صدر اور حکام دبئی الشیخ محمد بن راشد آل مکتوم نے امارات میں ڈاک کے شعبے کے ایک دفترمیں صارفین کے انتظار کے لیے لگی لمبی قطار کی ایک تصویر ملنے پر سخت برہمی کا اظہارکیا ہے۔

العربیہ ڈاٹ نیٹ کے مطابق مائیکرو بلاگنگ ویب سائیٹ'ٹویٹر'پوسٹ کردہ ایک ٹویٹ میں الشیخ محمد بن راشدنے متنازع تصویر کے ساتھ تبصرہ کرتے ہوئے لکھا کہ "یہ ہمارا معیار" نہیں۔ انہوں نے بتایا کہ ڈاک کےایک دفترکے اندر کی تصویر خفیہ ذرائع سے ان تک پہنچی اور انہوں‌نے اس کی فوری تحقیقات کے لیے ایک ٹیم وہاں روانہ کی جس نے اس حوالے سے اپنی رپورٹ پیش کی ہے۔

ایک دوسری ٹویٹ میں الشیخ محمد بن راشد نے لکھا کہ میں ڈاک کے دفتر میں ہونے والی لاپرواہی کا نوٹس لینے کے بعد محکمے کو بتا دیا ہے کہ ہم شفافیت کے سوا اور کوئی بات قبول نہیں کریں گے۔

رپورٹ میں کہا گیا ہےکہ سروسز کی بہتری کے لیے صارفین کو زیادہ انتظار کرنا پڑا ہے۔ نیز سروسز صارفین کی ضرورت کے مطابق ڈیزائن نہیں کی گئی تھیں اور دفترمیں گاہکوں کو ڈیل کرنےوالا عملہ صارفین کی تعداد کے مطابق نہیں تھا۔

مقبول خبریں اہم خبریں

مقبول خبریں