ترکی نے ایرانی تیل کی خریداری پر چھوٹ ختم کرنے کا امریکی فیصلہ مسترد کر دیا

پہلی اشاعت: آخری اپ ڈیٹ:
مطالعہ موڈ چلائیں
100% Font Size
1 منٹ read

ترکی نے امریکا کی جانب سے ایرانی تیل کی خریداری پردی گئی مہلت ختم کرنے کا امریکی فیصلہ مسترد کردیا۔

العربیہ ڈاٹ نیٹ‌کے مطابق ترکی کےوزیرخارجہ مولود جاووش اوگلو نے ایک بیان میں کہا کہ امریکا کی طرف سے ایرانی تیل پرپابندیوں کا نفاذ علاقائی اور امن وستحکام میں معاون ثابت نہیں‌ہوسکتا۔

انہوں نے کہا کہ ترکی ایرانی تیل پر امریکی پابندیوں کےفیصلے کو قبول نہیں‌ کرے گا۔ امریکی اقدامات یک طرفہ ہیں اور ترکی اپنے پڑوسی ملکوں کے ساتھ تعلقات خراب نہیں ہونے دے گا۔

خیال رہے کہ امریکی صدر ڈونلڈ ٹرمپ نے گذشتہ روزایک بیان میں کہا کہ ایران سے تیل کی خریداری پردی گئی چھوٹ ختم کرنے کا اعلان کیا اور کہاکہ دومئی کے بعد ایران سے تیل کی خریداری پردی گئی چھوٹ ختم کردی جائے گی۔

امریکا کی طرف سے چین،بھارت، جنوبی کوریا، ترکی، جاپان، تائیوان،اٹلی اور یونان کو 2 مئی 2019ءتک ایران سے تیل کی خریداری جاری رکھنے کی مہلت دی گئی تھی۔ امریکانے اس مہلت میں مزید توسیع نہ کرنے کا اعلان کیا ہے۔

مقبول خبریں اہم خبریں

مقبول خبریں