سال 2022ء کا فٹ بال ورلڈ کپ بچانے کے لیے قطر کا بھارتی شائقین کو سہولیات دینے کا فیصلہ

پہلی اشاعت: آخری اپ ڈیٹ:
مطالعہ موڈ چلائیں
100% Font Size
دو منٹ read

قطر کی حکومت نے سنہ 2022ء کے فٹ بال ورلڈ کپ کوبچانے اور اس میں زیادہ سے زیادہ غیرملکی شائقین کو شامل کرنے کے لیے بھارتی شہریوں کو آسان شرائط پر ویزہ فراہم کرنے کا فیصلہ کیا ہے۔

برطانوی اخبار"اکانومسٹ' کے مطابق دوحہ میں 2022ء کو ہونے والے فٹ بال ورلڈ کپ کے موقع پر کئی عرب ممالک قطر کا بائیکاٹ کریں گے۔ ایسے میں دوحہ کو شایقین کی تعداد بڑھانے کےلیے متبادل راستے اختیار کرنا پڑے ہیں۔
ان اقدامات میں بھارتی شہریوں کی فٹ بال میچوں کے دوران کھیل کے میدانوں میں رسائی کی سہولیات فراہم کرنا شامل ہے۔

اخباری رپورٹ کے مطابق قطر کی عرب ممالک کے حوالے سے پالیسی دوحہ کواس عالمی ایونٹ پرعرب شایقین سے محروم کردےگی۔ اگر دوسرے عرب ممالک کےساتھ قطر کے تعلقات درست نہیں ہوتے تو دوحہ کو شایقین کمی پوری کرنے کے لیے دوسرے ممالک کےشہریوں کا سہارا لینا پڑےگا۔

خیال رہے کہ ایک تہائی عرب آبادی ایسے علاقوں میں رہتی ہے جن کے پاس دوحہ کے لیے براہ راست سفر کا کوئی ذریعہ نہیں‌ ہے۔

فٹ بال ورلڈ کپ 2022ء کے ایگزیکٹو ڈائریکٹر ناصر الخاطر نے بھارتی ٹی وی 'سپر اسٹار' کی نامہ نگار سے بات کرتے ہوئے کہاکہ تین سال بعد ہونےوالے فٹ بال کپ میں ہندوستانی باشندوں کو کھیل کےمیدانوں میں تماشائیوں کے طورپر داخل ہونے کی سہولت فراہم کی جائے گی۔ ان کا کہنا تھا کہ کوئی بھی بھارتی شہری ہوائی اڈے سے حاصل کردہ ویزے سےفٹ بال گرائونڈ میں داخل ہوسکے گا۔

خیال رہے کہ سال 2018ء کے فٹ بال ورلڈ میں ٹکٹ خریدنے والے شائقین میں تیسرا بڑا طبقہ ہندوستانی باشندوں پر مشتمل تھا اور قطر بھی بھارتی شہریوں ہی کو اپنے ہاں ہونے والے فٹ بال ورلڈ کپ میں شریک کرنے کی کوشش کررہا ہے۔

قطر میں فٹ بال ورلڈ کپ کے انتظامات کے حوالےسے ہونےوالے کاموں کے بارےمیں بھی لرزہ خیز واقعات سامنے آرہےہیں۔ فٹ‌بال ورلڈ کپ کے لیے بنیادی ڈھانچے کی تعمیر کے دوران انسانی حقوق کی پامالیوں اور انتظامیہ کی رشوت خوری کے الزامات بھی سامنے آرہےہیں۔

مقبول خبریں اہم خبریں

مقبول خبریں