امریکی پابندیوں کے بعد حزب اللہ نے سڑکوں پر چندہ بکس لگا دیئے

پہلی اشاعت: آخری اپ ڈیٹ:
مطالعہ موڈ چلائیں
100% Font Size
1 منٹ read

امریکا کی طرف سے لبنانی شیعہ ملیشیا حزب اللہ کے مالی سوتوں کو خشک کرنےکے لیے تنظیم کےمالیاتی نیٹ ورک پرکاری ضرب لگائی ہے جس کے بعد حزب اللہ سڑکوں پر لوگوں سے چندہ مانگنے پر مجبور ہوگئی ہے۔

العربیہ ڈاٹ‌نیٹ نے اپنی ایک رپورٹ میں حزب اللہ کے چندے کے حصول کے نئے طریقہ کار کی تفصیلات بیان کی ہیں۔ رپورٹ‌کے مطابق جنوبی لبنان کی سڑکوں پر بجلی کے کھمبوں اور دیگر مقامات پر جگہ جگہ چندہ بکس نصب کیےگئے ہیں جن پر "مزاحمتی کمیٹی کی معاونت کے لیے حصہ ڈالیں" کےالفاظ درج ہیں۔

امریکی نشریاتی ادارے 'بلومبرگ' کے مطابق حزب اللہ کو امریکی پابندیوں نے مالیاتی امور چلانے کے لیےطریقہ کار تبدیل کردیا ہے۔ ایران پر امریکی پابندیوں‌نےبھی حزب اللہ کو مالی طورپر کمزور کیا ہے اور آنے والے دنوں میں حزب اللہ کےمالی نیٹ ورک کو مزید پابندیوں میں جکڑا جا سکتا ہے۔

امریکی پابندیوں‌کےبعد نو مارچ کو حزب اللہ کے سربراہ حسن نصراللہ نے ایک ریکارڈڈ ٹی وی بیان میں عوام سے بڑھ چڑھ کر مالی امداد فراہم کرنے کی اپیل کی تھی۔

بیروت کی سڑکوں‌پر جا بہ جا پھیلے چندہ بکسوں پر طرح طرح کے نعرے درج ہیں جن میں شہریوں کو حزب اللہ کے لیے چندہ دینے کی اپیل کی گئی ہے۔

مقبول خبریں اہم خبریں

مقبول خبریں