شام: روسی فوج کی بمباری سے بچوں سمیت 10 شہری جاں بحق

پہلی اشاعت: آخری اپ ڈیٹ:
مطالعہ موڈ چلائیں
100% Font Size
1 منٹ read

شام کے شمال مغربی علاقے ادلب میں روسی فوج کی وحشیانہ بمباری کے نتیجے میں کم سے کم 10 شہری مارے گئے۔ مرنے والوں میں دو بچے بھی شامل ہیں۔

شام میں انسانی حقوق کی صورت حال پر نظر رکھنے والے ادارے 'شامی آبزرویٹری' کے مطابق روسی فوج کے جنگی طیاروں‌ نے جمعہ کے روز ادلب میں کفر نبل اور تل ھواش کے مقامات پر شہری آبادی پر بم باری کی جس کے نتیجے میں دو بچوں سمیت کم سے کم 10 شہری جاں بحق ہو گئے۔

خیال رہے کہ گزشتہ برس ستمبر میں روس اور ترکی کے درمیان طے پائے ایک معاہدے میں ادلب کو 'اسلحہ سے پاک' علاقہ قرار دینے سے اتفاق کیا گیا تھا۔ یہ معاہدہ اس علاقے میں شامی اور روسی فوج کی طرف سے بڑے پیمانے پر فوجی آپریشن سے بچنے کے لیے کیا گیا تھا۔

تازہ کشیدگی کے بعد اقوام متحدہ میں سخت تشویش کا اظہار کیا ہے۔ اقوام متحدہ سے روس اور شامی فوج پر زور دیا گیا ہے کہ وہ شام میں فوجی کارروائیوں کے دوران شہریوں کی جانوں کا تحفظ یقینی بنائیں۔

مقبول خبریں اہم خبریں

مقبول خبریں