بشار حکومت دہشت گرد ملیشیا کا روپ دھار رہی ہے: شامی اپوزیشن

پہلی اشاعت: آخری اپ ڈیٹ:
مطالعہ موڈ چلائیں
100% Font Size
1 منٹ read

شام میں اپوزیشن کی جانب سے جاری ایک بیان میں کہا گیا ہے کہ بشار الاسد کی حکومت دہشت گرد ملیشیا کی صورت اختیار کر رہی ہے۔ یہ بات نیشنل لبریشن فرنٹ اور فِری سیرین آرمی کے مشترکہ بیان میں سامنے آئی ہے۔

یہ بیان شامی حکومت کے حوالے سے روسی صدر ولادی میر پوتین کے بیان کے جواب میں جاری کیا گیا ہے۔

بیان کے مطابق ایسے وقت میں جب کہ آستانہ کانفرنس کا اختتامی اعلامیہ جاری ہوا تو روسی لڑاکا طیارے حماہ اور ادلب کے دیہات اور قصبوں کو جلا کر راکھ کر رہے تھے اور بدترین قتل و غارت کا بازار گرم کرنے میں مصروف تھے۔

بیان میں مزید کہا گیا کہ شہریوں پر بم باری، مساجد، گھروں اور اسکولوں کا انہدام اور بین الاقوامی طور پر ممنوعہ ہتھیاروں کا استعمال یہ کامیابی کا اشاریہ نہیں۔

شامی اپوزیشن نے باور کرایا کہ بشار حکومت کے لیے روس کی حمایت جاری رہنے کا مطلب قتل و غارت اور تباہی کو دوام بخشنا ہے۔ بیان میں کہا گیا ہے کہ شامی حکومت کے زیر کنٹرول علاقوں میں بھی مزاحمت کا سلسلہ جاری ہے۔


مقبول خبریں اہم خبریں

مقبول خبریں